روہیلانوالی‘ رول ہیلتھ سنٹر لاوارث‘ آپریشن تھیٹر کو تالے‘ ای سی جی مشین بند

      روہیلانوالی‘ رول ہیلتھ سنٹر لاوارث‘ آپریشن تھیٹر کو تالے‘ ای سی جی ...

  



روہیلانوالی (نامہ نگار)روہیلانوالی47 مواضعات کے عوام کو علاج ومعالجہ کی بہترین سہولیات کی فراہمی کے لئے رورل ہیلتھ سنٹر روہیلانوالی 1986 میں قائم ہوا تھا اور اب موجودہ آبادی ساڑھے تین لاکھ سے تجاوز کر چکی ہے،اس کے باوجود عوام کو علاج(بقیہ نمبر48صفحہ12پر)

ومعالجہ کی بہترین سہولیات فراہم کرنے کے بجائیعوام کا استحصال کیا جا رہاہے،ہسپتال میں سپیشلسٹ سرجن کی گزشتہ دوسال سے تعنیاتی نہ ہونے سے آپریشن تھیٹر کو تالے لگ چکے ہیں،اس سے قبل اجازت ناہونے کے باوجود ڈاکٹر اظہر بھٹہ اپنی صوابدید پر مریضوں کے آپریشن کرتا تھا،چونکہ اب انکی ڈیوٹی نائٹ لگ چکی ہے اور انہوں نے اپنا پرائیویٹ ہسپتال بنا لیا ہے تو اب لواحقین کو اپنے مریضوں کے آپریشن کرانے میں پریشانی کا سامنا کرنا پڑرہا ہے،جبکہ متعلقہ عملہ باہم ڈیل کر کے پرائیویٹ ڈاکٹروں سمیت سرکاری ڈاکٹروں کے بنائے گئے پرائیویٹ ہسپتالوں سے آپریشن کرا رہے ہیں،جس سے ڈاکٹروں کی چاندی لگ گئی ہے اور غریب جدید دور میں بھی حکمرانوں،محکمہ صحت کی غیر مستحکم پالیسیوں کو کوس رہا ہے،رورل ہیلتھ سنٹر میں ماہانہ آؤٹ ڈور 23 ہزار سے زائد مریض علاج معالجے کے لئے رجوع کرتے ہیں،مگر ادویات کی قلت سے شہریوں،دور دراز علاقوں سے آئے ہوئے مریضوں کو مایوس ہو کر خالی ہاتھ لوٹنا پڑتا ہے،جو کہ کسی اذیت سے کم نہیں ہے،ہسپتال میں پانچ سال سے موجود ای سی جی مشین ٹیکنیشن کی عدم دستیابی سے بند پڑی ہے،سانپ، کتا کاٹنے کی ویکسین عرصہ دراز سے دستیاب نہیں ہیں،اس کے علاوہ موجودہ صورتحال کے پیش نظر اب مریضوں سے الڑا ساؤنڈ کے 150،ایکسرے 60،خون ٹیسٹ 50،ڈینٹل فیس 50 روپے فی کس مریض وصول کئے جا رہے ہیں،جبکہ ٹی بی کیٹیسٹ پرائیویٹ لیبارٹریوں سے کرائے جا رہے ہیں،جبکہ ایمر جنسی میں ٹیٹسن انجکیشن،ٹیبلٹس،برنولہ، پٹیاں،ٹنچر، انٹی بایوٹک کریمیں ودیگر سامان اکثر معمول نایاب ہوتا ہے،رورل ہیلتھ سنٹر میں مریضوں کو علاج ومعالج کی سہولیات بہتر انداز میں نا ملنے پر عوام فرشتوں کے حوالے ہیں،شہریوں رانا الیاس، محمد عرفان بھٹہ،الطاف گجر، نواب شاہ،الطاف گجر،ای جمیل، رانا علیم، اشرف مونا، محمد ساجد ودیگر نے اپنے بیان میں کہا ہے کہ رورل ہیلتھ روہیلانوالی میں بنیادی سہولتوں کا فقدان محکمہ صحت مظفرگڑھ کے افسران کی عدم دلچسپی اورلا پرواحی کا نتیجہ ہے، ڈپٹی کمشنر مظفرگڑھ امجد شعیب خان ترین سے موجودہ صورتحال پر از خود نوٹس لیتے ہوئے سہولیات کی فراہمی ہر صورت یقینی بنائیں،شہریوں نے ایم پی اے نوابزادہ منصور احمد خان سے اپیل کرتے ہوئے رورل ہیلتھ سنٹر روہیلانوالی کی اپ گریڈیشن کا مطالبہ کیا ہے، جب کہ موقْف میں سینئر میڈیکل آفیسرڈاکٹر حافظ امان اللہ خان نے کہا ہے کہ حلقہ وسیع ہونے کے وجہ سے ہسپتال میں علاج و معالجہ حاصل کرنے والے مریضوں کی تعداد میں اضافہ دن بدن بڑھ رہا ہے اس کے مطابق ہسپتال کا بجٹ انتہائی کم ہے،ڈاکٹرز،عملہ کی کمی کی وجہ سے جو سہولیات محکمہ صحت دے رہا ہے وہ عوام میں ڈلیور کر رہے ہیں۔

مشین بند

مزید : ملتان صفحہ آخر