مسکرانے کے 12 فوائد

مسکرانے کے 12 فوائد
مسکرانے کے 12 فوائد

  



مجھے توکیا ہم سبھی کو روتا بسورتا منہ کتنا برا لگتا ہے ۔جبکہ برمحل مسکراہٹ اور خوشگوار موڈ ہر کسی کو بھاتا ہے ۔ہمیں تو پہلےمسکرانے کے دو تین فوائد ہی معلوم تھے لیکن جب ہم نے کئی کتابوں کا مطالعہ کرنے اور ریسرچ کرنے کی زحمت گوارا کرہی لی تو سوچا کہ کیوں نہ اس پر ایک بلاگ ہی لکھ دیا جائے ، اب ہمیں یہ بھی معلوم ہے کہ اس کو پڑھنے کے بعد آپ کو بھی مسکرانے کی کوئی نہ کوئی وجہ مل ہی جائے گی ۔

 مسکراہٹ چہرے کی قدر وقیمت میں اضافے کا باعث ہے ۔ اگر یہ کہیں کہ مسکرانے کی بالکل وہی اہمیت ہے جو کسی عمارت کے اندرایک کھڑکی کی ہوتی ہے تو بالکل غلط نہیں ۔ جب ہماراچہرہ ہنستا مسکراتا ہوتا ہے تو خود بخود ہی دوسرے لوگ ہماری طرف متوجہ ہونے لگتے ہیں جس کی وجہ یہ ہے کہ ہم سب لوگ خوشی کے متلاشی ہوتے ہیں  ۔مسکرانے سے ہمارے مسلز مضبوط ہوتے ہیں ۔

مسکراہٹ صرف اوپری احساسات کا نام نہیں ہے بلکہ اس سے ہمارے مسلز متحرک رہتے ہیں جن کی کم ازکم تعداد بھی 5  سے 53  تک ہوتی ہے ۔

 مسکراہٹ مثبت شخصیت کو ظاہر کرتی ہے ۔

مسکراہٹ سے یہ علم ہوتا ہے کہ ہم  زندگی کو مثبت انداز سے دیکھنے کے عادی ہیں ، مشکلات کا مقابلہ حوصلے سے کرتے ہیں ۔ کہا جاتا ہے کہ کامیاب لوگ ہمیشہ اپنے رویےکو بہتربنانے اور لوگوں کیساتھ بہترین ڈیلنگ کے لئے مسکراہٹ کو اپنا ہتھیار بناتے ہیں ۔

 مسکراہٹ طویل العمری کا باعث ہے ۔

مسکرانا ہماری صحت کے لئے بہت اچھا ہوتاہے ، کیونکہ ہم خوش رہنے لگتے ہیں ۔خوشی کا براہ راست تعلق طوی العمری سے ہے ۔ ہم جتنا خوش رہیں گے اتنا ہی مطمئن رہیں گے اور یہی اطمینان ہماری زندگی کے طویل سفر کو اور خوشگوار اور طویل بنا دے گا ۔

 مسکراہٹ  تنقید کا سامنا کرنے میں مددگار ہوتی ہے ۔

دنیا میں سچ پوچھیں تو کوئی آپ کو خوش نہیں دیکھ سکتا ماسوائے چند ایک لوگوں کے ۔ لیکن مسکراہٹ تنقید کا بہت اچھا جواب ہے ۔  میں نے کہیں پڑھا تھا کہ اب آپ ہرکسی کو گولی تو مارنے سے رہے اسلئے مسکراہٹ آپ پر کی جانے والی تنقید کا موثر اور ٹھوس جواب ہے ۔

 مسکراہٹ پر کچھ خرچ نہیں ہوتا ۔

مفت چیز کس  کو پسند نہیں ہوتی ، بس تو مسکراہٹ بالکل فری ہے  اور  مسکراتا ہوا چہرہ بیش قیمت ۔

 مسکراہٹ آپ کو سماجی کردار ادا کرنے میں ممدو معاون ثابت ہوتی ہے ۔

مسکراہٹ سے آپکو سوشل ہونے میں بہت آسانی ہوتی ہے کیونکہ آُپ دنیا سےکٹ کر نہیں رہ سکتے ۔ آپ کو سماجی حیوان ہونے کے ناطے بات چیت تو کرنا پڑتی ہے ۔

 مسکراہٹ ذہنی دبائو کم کرتی ہے ۔

موجودہ افراتفری کے اس دور میں ہمارا پریشان ہونا بالکل فطری اور لازمی ہے ۔ ایسے میں مسکراہٹ ذہنی دبائو کو کم کرتی ہے ۔چونکہ ہمارے مسلز بھی مسکرانے کی وجہ سے متحرک رہتے ہیں تو دماغ پر بھی زیادہ بوجھ نہیں پڑتا ۔

 مسکراہٹ سے بلڈ پریشر کم ہوتا ہے ۔

مسکرانا بلڈ پریشر بھی کم کرتا ہے کیونکہ دماغ اور دل کی شریانوں کو خون کی سپلائی فراہم رہتی ہے اور بلند فشار خون سے نجات ملنے لگتی ہے ۔

 مسکراہٹ خود اعتمادی کی نشانی ہے ۔

خوداعتمادی زندگی میں بہت ضروری ہے ۔زندگی میں کچھ اور سیکھنا ضروری ہو یا نہیں خود اعتماد بننا بہت اہم ہے ، جس سے آپ مشکل سے مشکل کام بھی آسانی سے کر لیتے ہیں ۔تاہم اسکا ایک حد میں ہونا بہت ضروری ہے ۔

 مسکراہٹ آپ کو جوان رکھتی ہے ۔

مسکراہٹ سے دل جوان رہتا ہے اور دل جوان ہو تو سمجھیں زندگی پرلطف اور آپ کا چہرہ ہمیشہ شگفتہ ۔

 مسکراہٹ سےہمارا مدافعاتی نظام بہتر رہتا ہے ۔

قوت معدافت ہمیں بیماریوں سے لڑنے کا حوصلہ عطا کرتی ہےاور مسکرانے سے ہمارا مدافعاتی نظام بہتر ہونے لگتا ہے ۔

میڈیکل سائنس کے  مطابق وہ قہقہ آپ کو ہمیشہ تندرست رکھتا ہے  جو مسکراہٹ سے شروع ہو کیونکہ براہ راست قہقہ لگانے سے ہارٹ فیل بھی ہو سکتا ہے  ۔ تو جناب آپ مسکرائیے ضرورلیکن ایک حد میں ،ایسا نہ ہوکہ مسلسل مسکرانے سے لوگ آپ کو ایک مضحکہ خیز شخصیت ہی سمجھ لیں ۔

۔

 نوٹ:یہ بلاگر کا ذاتی نقطہ نظر ہے جس سے ادارے کا متفق ہونا ضروری نہیں ۔

۔

اگرآپ بھی ڈیلی پاکستان کیساتھ بلاگ لکھنا چاہتے ہیں تو اپنی تحاریر ای میل ایڈریس ’dailypak1k@gmail.com‘ یا واٹس ایپ "03009194327" پر بھیج دیں۔

مزید : بلاگ