’مجھے یاد بھی نہیں اس دن کتنے لوگوں نے مجھے جنسی زیادتی کا نشانہ بنایا‘ نوجوان لڑکی نے دل تڑپا دینے والی بات کہہ دی

’مجھے یاد بھی نہیں اس دن کتنے لوگوں نے مجھے جنسی زیادتی کا نشانہ بنایا‘ ...
’مجھے یاد بھی نہیں اس دن کتنے لوگوں نے مجھے جنسی زیادتی کا نشانہ بنایا‘ نوجوان لڑکی نے دل تڑپا دینے والی بات کہہ دی

  



لندن(مانیٹرنگ ڈیسک) قبرص میں 12اسرائیلی مردوں کے ہاتھوں اجتماعی زیادتی کا نشانہ بننے والی برطانوی لڑکی نے بالآخر اپنے ساتھ پیش آنے والا یہ انسانیت سوز واقعہ دنیا کو سنا دیا ہے۔ میل آن لائن کے مطابق اس 19سالہ لڑکی نے بتایا ہے کہ اس کی ان اسرائیلی نوجوانوں میں سے ایک کے ساتھ دوستی ہوئی تھی اوراور اسے اس نے اپنے ہوٹل روم میں بلایا تھا لیکن وہ ساتھ اپنے 11دوستوں کو لے کر آ گیا۔ لڑکی نے وہاں سے بھاگنے کی کوشش کی لیکن انہوں نے اسے کمرے میں بند کرکے اجتماعی زیادتی کا نشانہ بنا ڈالا۔

لڑکی کا کہنا ہے کہ ”ان میں سے چند لوگوں نے جب مجھ سے زیادتی کی تو میری حالت غیر ہو گئی اور پھر مجھے نہیں معلوم کہ ان میں سے کتنوں نے مجھ سے زیادتی کی۔ اس روز مجھے موت اپنی آنکھوں کے سامنے نظر آ رہی تھی۔ اس واقعے کی تکلیف میں الفاظ میں بیان نہیں کر سکتی۔ان کے چنگل سے نکلنے کے بعد جب میں پولیس کے پاس گئی تو پولیس نے الٹا مجھے ہی مجرم بنا ڈالا۔“

رپورٹ کے مطابق واقعے کے بعد جب لڑکی نے پولیس کو رپورٹ درج کروائی تو ابتدائی تفتیش کے بعد پولیس نے لڑکی کو ہی جھوٹ بولنے اور پولیس کو گمراہ کرنے کے الزامات کے تحت گرفتار کرکے عدالت میں پیش کر دیا۔ عدالت کے حکم پر جب لڑکی کا طبی معائنہ کرایا گیا تو اس کے ساتھ جنسی زیادتی ثابت ہو گئی۔ لڑکی نے بتایا کہ ”قبرص میں پولیس نے مجھے دو دن تک اندھیرے کمرے میں بند رکھا اور وکیل کو بھی مجھ تک رسائی نہیں دی گئی۔“ رپورٹ کے مطابق اب لڑکی نے برطانوی عدالت میں انصاف کے لیے اپیل دائر کر رکھی ہے۔

مزید : برطانیہ