جرمن عوام نسل پرستی کو مسترد کر دیں، چا نسلر انجیلا مرکل

جرمن عوام نسل پرستی کو مسترد کر دیں، چا نسلر انجیلا مرکل

  

بر لن (آن لائن)جرمن چانسلر انجیلا مرکل نے عوام سے اپیل کی ہے کہ وہ مسلم مخالف تحریک کی حمایت سے اجتناب کریں کیوں کہ یہ نسل پرستی اور نفرت انگیزی سے عبارت ہے۔ انہوں نے نئے سال پر جرمن عوام سے اپنے خطاب میں کہا کہ جرمنی کو ہرحال میں مسلح تنازعات کی وجہ سے ہجرت پر مجبور ہونے والوں کو اپنے ہاں جگہ دینا ہو گی، تاکہ ان کے بچے خوف کے سایوں سے دور نشوونما پائیں۔واضح رہے کہ ان دنوں شام اور مسلح تنازعات کے شکار دیگر علاقوں سے ہجرت کر کے جرمنی میں سیاسی پناہ کی درخواستیں دینے والوں کے سیلاب کی وجہ سے جرمن عوام میں بے چینی اور تشویش پائی جاتی ہے اور ایسے میں ایک نئی تحریک نے جنم لیا ہے۔

پیٹریاٹک یوروپیئن اگینسٹ دی اسلامائزیشن آف دی ویسٹ یا پیگیِڈا نامی یہ تحریک مشرقی جرمن شہر ڈریسڈن سے شروع ہوئی تھی، جہاں یہ ہر پیر کو مظاہرہ کرتی ہے، تاہم اب یہ تحریک متعدد دیگر شہروں میں بھی ریلیاں نکال چکی ہے۔مرکل نے اپنے بیان میں دیوار برلن کے انہدام سے قبل ہونے والے احتجاجی مظاہروں کا حوالہ دیتے ہوئے۔

کہا، ’آج بہت سے لوگ دوبارہ ہم عوام ہیں کے نعرے کے ساتھ شور مچاتے نظر آ رہے ہیں، تاہم ان کی مراد یہ ہے کہ آپ ہم میں شامل نہیں، کیوں کہ آپ کی جلد کا رنگ اور آپ کا مذہب مختلف ہے۔

‘ان کا مزید کہنا تھا، ’اس لیے میں آج ان تمام افراد سے جو ان مظاہروں میں شرکت کر رہے ہیں، کہتی ہوں، ان لوگوں کی پیروی چھوڑ دیجیے جو آپ سے اپیلیں کر رہے ہیں۔ کیوں کہ ان کے دلوں میں نفرتیں، تفریق اور ناانصافی شامل ہے۔

مزید :

عالمی منظر -