کراچی میں جماعت اسلامی کے رہنما کا قتل قابل مذمت ہے،ڈاکٹر وسیم اختر

کراچی میں جماعت اسلامی کے رہنما کا قتل قابل مذمت ہے،ڈاکٹر وسیم اختر

  

 لاہور(پ ر )پارلےمانی لےڈرصوبائی اسمبلی و امیرجماعت اسلامی پنجاب ڈاکٹرسیدوسیم اخترنے جماعت اسلامی گڈاب ٹاﺅن کراچی کے ناظم ارشدعرشی کوٹارگٹ کلنگ میں شہید کرنے کی شدیدالفاظ میں مذمت کرتے ہوئے کہاہے کہ کراچی شہر میں ٹارگٹڈ آپریشن کے باوجود ٹارگٹ کلنگ کاسلسلہ جاری ہے اور یہ تھمنے کانام نہیں لے رہاحکومت اور سندھ انتظامیہ روشنیوں کے شہر کو پر امن بنانے میں ناکام ہوچکی ہے۔قانون نافذ کرنے والے ادارے اور انتظامیہ ارشدعرشی کے قاتلوں کوفوری طور پر گرفتار کرکے قانون کے مطابق سزادیںملک میں عوام کے جان ومال اور عزت محفوظ نہیں۔

انہوں نے کہاکہ ملک کی موجودہ صورتحال اس بات کی عکاسی کرتی ہے کہ حکومت قانون کی حکمرانی قائم کرنے میں بری طرح ناکام ہوچکی ہے۔پاکستان میں مایوسی کے اندھیرے چھائے ہوئے ہیںلاقانونیت کی انتہاءہوچکی ہے ۔پشاور سانحہ کی آڑ میں آئین کے ساتھ کھلواڑ کیاجارہاہے جسے برداشت نہیں کیاجائےگا۔انہوں نے کہاکہ انسداددہشت گردی کے لئے پاکستان کی قربانیاں دنیاکی نظر میں کچھ بھی نہیںجب تک ملک میں جنرل (ر)پرویزمشرف کی پالیسیوں کا تسلسل جاری رہے گا امن قائم نہیں ہوسکتاضرورت اس امر کی ہے کہ فی الفور حکومت خارجہ پالیسی کو از سرنوتشکیل دے۔ملک وقوم غیر معمولی صورتحال کاشکار ہیںآپس کے اختلافات بھلاکراتحادویکجہتی کوقائم رکھتے ہوئے درپیش مسائل پر قابو پاناہوگا۔ڈاکٹر سید وسیم اختر نے مزید کہاکہ نائن الیون کے ڈرامے کے بعد شروع ہونے والی نام نہاد جنگ کا ہدف پاکستان کے نیوکلیئر اثاثہ جات تھے اور آج یہ جنگ ہمارے گلی محلوں تک پہنچ چکی ہے جس میں ہمارے ہی بچوں کو شہید کیاجارہاہے

۔حکمرانوں کی عاقبت نااندیشی کی وجہ سے پاکستان کی آزادی،خودمختاری،وقار اور سلامتی سب کچھ داﺅپر لگ چکاہے۔جمہوری قدروں کاگلہ گھونٹنے والے حکمران دراصل اپنی نااہلیت کوچھپارہے ہیں۔                جاری کردہ

مزید :

میٹروپولیٹن 4 -