این اے 118،الیکشن ٹربیونل نے 99تھیلوں کے معائنہ کا حکم دےدیا

این اے 118،الیکشن ٹربیونل نے 99تھیلوں کے معائنہ کا حکم دےدیا

  

لاہور(نامہ نگار)الیکشن ٹربیونل نے این اے 118کے نئے ملنے والے 99تھیلوں کے معائنہ کا حکم دے دیا ،ٹربیونل نے ضلعی خزانہ افسر اور ڈسٹرکٹ ریٹرنگ افیسر کو 99تھیلے معائنہ کمشن غلام حسین اعوان کے حوالے کرنے کی ہدایت کی ہے تحریک انصاف کے امیدوار حامد زمان نے رکن قومی اسمبلی ملک ریاض کے خلاف الیکشن ٹربیونل میں دھاندی کا کیس دائر کررکھا ہے جس پر الیکشن ٹربیونل نے 2ماہ قبل انسپکشن کمیشن غلام حسین اعوان کو ووٹوں کے معائنہ کی ذمہ داری سونپی تھی الیکشن کمیشن کومعائنہ کے لئے صرف 211پولنگ سٹیشنز کے تھیلے ملے جبکہ ننانوے تھیلے دفترخزانہ کے ریکارڈ میں مکس ہونے کی وجہ سے بروقت دستیاب نہ ہو سکے اور نہ ہی ان کا معائنہ نہیں ہو سکا۔۔ ایم این اے ملک ریاض نے الیکشن ٹربیونل میں درخواست دائر کرتے ہوئے موقف اختیار کیا تھا کہ 99تھیلے جو صوبائی حلقے کے ریکارڈ میں مکس ہونے پرمعائنہ کے وقت دستیاب نہیں ہو سکے وہ اب خزانہ آفس کے ریکارڈ سے مل گئے ہیں ان تھیلوں کا بھی معائنہ کیا جائےتاکہ تمام حقائق ٹربیونل کے سامنے ائیں اور ان کی پوزیشن کلیئر ہو سکے الیکشن ٹربیونل نے ملک ریاض کی درخواست کو منظور کرتے ہوئے ضلعی خزانہ افسر اور ڈسٹرکٹ ریٹرنگ افیسر کو این اے 118کے ننانوے تھیلے معائنہ کمیشن غلام حسین کو حوالے کرنے کا حکم دیا ہے جبکہ ڈسٹرکٹ الیکشن کمشنر کو ڈی سی او لاہورسے رابطہ کرکے کمیشن کو معائنہ کیلئے جگہ فراہم کرنےاور سی سی پی او لاہور کو معائنہ کے دوران کمیشن کو سیکورٹی فراہم کرنے کی ہدایت کی ہے . 7> جنوری تک کمیشن معائنہ مکمل کرکے اپنی رپورٹ ٹربیونل میں جمع کراٰئیں گے اور ملک ریاض کمیشن کے ارکان کو 2،2 لاکھ معاوضہ دیں گے۔

معائنہ کا حکم

مزید :

صفحہ آخر -