گوانتاناموبے جیل کے مزیدپانچ قیدی رہا ہو کر قازقستان پہنچ گئے

گوانتاناموبے جیل کے مزیدپانچ قیدی رہا ہو کر قازقستان پہنچ گئے

  

واشنگٹن(اظہرزمان،بیوروچیف)گوانتاناموبے جیل کے مزید پانچ قیدی رہائی پا کر بحالی کے پروگرام کے تحت قازقستان پہنچ گئے ہیں۔ ایک عشرے سے زائد عرصہ اس جیل میں رہنے والے دہشت گردوں میں تین یمنی اور دو تیونس کے باشندے ہیں۔پینٹاگون نے منگل کی شام جاری ہونے والے ایک بیان میں یہ اطلاع دیتے ہوئے بتایا ہے کہ اس جیل کو بند کرنے کے اوبامہ انتظامیہ کے پروگرام کے تحت قیدیوں کی تعداد کم کی جا رہی ہے جواب127رہ گئی ہے۔روزنامہ ”پاکستان“ایک روز قبل سرکاری ذرائع کے حوالے سے یہ رپورٹ دے چکا ہے کہ آئندہ چھ ماہ کے دوران اس جیل سے 64قیدی رہا ہوں گے جس کے بعد جیل میں موجود قیدیوں کی تعداد 68رہ جائے گی۔ اس کریش پروگرام کے تحت یہ پانچ قیدی رہا ہوئے ہیں۔

معلوم ہوا ہے کہ قازقستان کی حکومت نے بحالی کے پروگرام کے تحت ان قیدیوں کو وصول کرنے پر رضامندی ظاہر کی ہے۔ ان پانچ قیدیوں نے وعدہ کیا ہے کہ وہ رہا ہو کر دہشت گردی میں ملوث نہیں ہونگے اورباقی زندگی ذمہ دار اور پر امن شہریوں کی طرح بسر کریں گے اور خاص طور پر افغانستان اور پاکستان میں کسی دہشت گردکارروائی میں شرکت نہیں کرینگے۔

تین یمنی باشندوں کے نام عاصم عبداللہ الخلقی، محمد علی حسین خانایانا اورصابری ابراہیم القریشی ہیں جنہیں پاکستانی فوج نے 2001ءمیں پکڑ کر امریکی حکام کے حوالے کیا تھا ۔ تیونس کے دوباشندوں کے نام عادل الحکیمی اورعبداللہ بن علی اللفتی ہیں۔

قیدی رہا

مزید :

صفحہ آخر -