143تحصیلوں میں لینڈ ریکارڈ کمپیوٹر ائزیشن کے سروس سینٹرز آپریشنل کر دیئے،شہباز شریف

143تحصیلوں میں لینڈ ریکارڈ کمپیوٹر ائزیشن کے سروس سینٹرز آپریشنل کر ...

  

 لاہور(پ ر) وزیراعلیٰ پنجاب محمد شہباز شریف کی زیرصدارت یہاں اعلیٰ سطح کا اجلاس ہواجس میں صوبے میں لینڈ ریکارڈ مینجمنٹ انفارمیشن سسٹم پر پیش رفت کاتفصیلی جائزہ لیا گیا۔ وزیراعلیٰ محمد شہبازشریف نے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ پنجاب کی تمام 143 تحصیلوں میں لینڈ ریکارڈ کمپیوٹرائزیشن کے سروس سینٹرز آپریشنل کردےئے گئے ہیں ۔لینڈ ریکارڈ کی کمپیوٹرائزیشن کے ذریعے فرد کا حصول صرف 30منٹ میں یقینی بنایاگیا ہے جس سے عوام کو خاطرخواہ ریلیف ملے گااورعوام کو پٹوار کلچر کے بوسیدہ نظام سے نجات ملے گی ۔ انہوں نے کہا کہ 20اضلاع میں لینڈ ریکارڈ کی کمپیوٹرائزیشن کا کام مکمل ہوچکا ہے اور 92سروس سینٹرز میں آن لائن سسٹم کو مربوط نظام سے منسلک کیا گیا ہے ۔ اراضی کے حوالے سے تین اضلاع میں گوگل میپنگ کا کام مکمل ہوچکا ہے ۔وزیراعلیٰ نے ہدایت کی کہ اراضی کی گوگل میپنگ کے پروگرام کا دائرہ کار پورے پنجاب تک پھیلایاجائے اورمنصوبے کی افادیت کیلئے موثر آگاہی مہم چلائی جائے ۔وزیراعلیٰ نے منصوبے پر ہونیوالی تیزرفتار پیش رفت پر متعلقہ اداروں اورحکام کی تعریف کرتے ہوئے کہا کہ مفادعامہ کا یہ ایک انتہائی اہم منصوبہ ہے جس کا براہ راست عوام کوفائدہ پہنچے گا۔وزیراعلیٰ نے ایم پی اے رانا ثناء اللہ کی سربراہی میں سٹیرنگ کمیٹی تشکیل دینے کی ہدایت کرتے ہوئے کہا کہ یہ کمیٹی اربن لینڈ ریکارڈ کی کمپیوٹرائزیشن کے منصوبے کے آغاز،کنسولیڈیشن پر پابندی ،لینڈریکارڈ مینجمنٹ انفارمیشن سسٹم کی مستقل مانیٹرنگ کے حوالے سے اتھارٹی کے قیام اوردیگر اہم امور کا جائزہ لے کر 7روز میں سفارشات پیش کرے ۔چےئرمین منصوبہ بندی و ترقیات نے پراجیکٹ پر پیش رفت کے حوالے سے بریفنگ دی۔ صوبائی وزیر قانون مجتبیٰ شجاع الرحمن، اراکین اسمبلی نجف عباس سیال، رانا ثناء اللہ خان،ڈاکٹر عائشہ غوث پاشا، میاں طارق محمود، قمرالاسلام، چیف سیکرٹری،سینئر ممبر بورڈ آف ریونیو، چیئرمین منصوبہ بندی و ترقیات اور متعلقہ حکام نے اجلاس میں شرکت کی۔ وزیراعلیٰ پنجاب محمد شہباز شریف سے یہاں لاہور میں چین کے پہلے قونصل جنرل یو بورن نے ملاقات کی۔ملاقات میں باہمی دلچسپی کے امور، دو طرفہ تعلقات اور مختلف شعبوں میں تعاون کے فروغ پر تبادلہ خیال کیا گیا۔ چینی قونصل جنرل نے سانحہ پشاور کی مذمت کرتے ہوئے بچوں اور اساتذہ کی شہادت پر گہرے دکھ اور افسوس کا اظہار کیا۔ وزیراعلیٰ محمد شہباز شریف نے اس موقع پر گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ معصوم بچوں کے خون سے ہاتھ رنگنے والے وحشی درندوں نے بربریت اورظلم کی انتہا ء کی۔ سانحہ پشاور دہشت گردی کا ایک بدترین واقعہ ہے۔ شہداء کی قربانیوں کے طفیل پوری قوم دہشت گردی کے خلاف متحد ہو چکی ہے۔ انہوں نے کہا کہ قومی اتفاق رائے سے دہشت گردی کے خلاف نیشنل ایکشن پلان مرتب کیا گیا ہے۔ پاکستان کی سرزمین پر دہشت گردوں کیلئے کوئی جگہ نہیں،شہدا کا خون رائیگاں نہیں جائے گااورپاکستان کو دہشت گردی کے ناسور سے ہمیشہ ہمیشہ کے لئے نجات دلائیں گے۔ وزیراعلیٰ نے کہا کہ چین پاکستان کا عظیم اور بااعتماد دوست ہے۔ چین نے ہر مشکل کی گھڑی میں ہمیشہ پاکستان کا بھرپور ساتھ دیا ہے۔ توانائی بحران پر قابو پانے کے حوالے سے چین کا بے پایاں تعاون لائق تحسین ہے۔پاکستان اورچین کی موجودہ لیڈر شپ کے دور میں دونوں ملکوں کے درمیان دوستی کے نئے باب کھلے ہیں ۔ اس موقع پر چینی قونصلیٹ کے دیگر عہدیداران بھی موجود تھے۔ وزیراعلیٰ پنجاب محمد شہبازشریف سے ٹیرا ڈیٹا کارپوریشن کے چیف ٹیکنالوجی آفیسر ڈاکٹر سٹیفن باربسٹ نے ملاقات کی۔ ملاقات میں ڈیٹا انیلسز ٹیکنالوجی کے استعمال اور افادیت پر بات چیت ہوئی۔ وزیراعلیٰ محمد شہباز شریف نے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ پنجاب حکومت صوبے میں گڈ گورننس اور شفافیت کے کلچر کو فروغ دینے کے لئے جدید ٹیکنالوجی سے استفادہ کررہی ہے۔ اداروں کی استعداد کار بڑھانے کے لئے انفارمیشن ٹیکنالوجی کی نئی جہتوں سے استفادہ وقت کی ضرورت ہے۔ انہو ں نے کہا کہ تعلیم،صحت ،توانائی ،ٹرانسپورٹ،سکیورٹی،جرائم کی روک تھام اور دیگر شعبوں میں ڈیٹا انیلسز ٹیکنالوجی کے ذریعے مزید بہتری لائی جا سکتی ہے۔ وزیراعلیٰ نے ہدایت کی کہ مختلف شعبوں میں ڈیٹا انیلسز ٹیکنالوجی کے استعمال کیلئے مربوط پروگرام مرتب کیاجائے۔چیف ٹیکنالوجی آفیسر ٹیرا ڈیٹا کارپوریشن نے اپنے ادارے کی سرگرمیوں کے بارے بریفنگ دی۔ صوبائی وزیر داخلہ کرنل (ر) شجاع خانزادہ ، انسپکٹر جنرل پولیس، چیئرمین منصوبہ بندی و ترقیات، چیئرمین پنجاب انفارمیشن ٹیکنالوجی بورڈاور دیگر متعلقہ حکام بھی اس موقع پر موجود تھے۔

مزید :

صفحہ اول -