سپریم کورٹ ،حسین حقانی کیخلاف میمو گیٹ کیس ان کیمرہ مقرر کرنے کا حکم

سپریم کورٹ ،حسین حقانی کیخلاف میمو گیٹ کیس ان کیمرہ مقرر کرنے کا حکم

  

اسلام آباد(آئی این پی ) سپریم کورٹ نے حسین حقانی کے خلاف میمو گیٹ کیس ان کیمرہ مقرر کرنے کا حکم د یتے ہوئے کیس کی سماعت غیر معینہ مدت کے لیے ملتوی کردی ۔ پیر کو چیف جسٹس کی سربراہی میں سپریم کورٹ کے 2 رکنی بنچ نے میمو گیٹ کیس کی سماعت کی۔ چیف جسٹس نے استفسار کیا کہ حسین حقانی کی واپسی کے حوالے سے کوئی پیش رفت ہوئی؟۔عدالتی معاون احمد بلال صوفی نے بتایا کہ پیش رفت ہوئی ہے لیکن ملکی مفاد کا معاملہ ہے اس لیے عدالت کو پیش رفت سے بند کمرے میں آگاہ کریں گے۔ عدالت نے عدالتی معاون کی استدعا منظور کرتے ہوئے کیس ان کیمرہ مقرر کرنے کا حکم دے دیا۔دریں اثنا ء گزشتہ روز چیف جسٹس ثاقب نثار کی سربراہی میں بنچ نے فاٹااورپاٹامیں ایف سی آرقانون کے خاتمے سے متعلق کیس کی سماعت کی، چیف جسٹس ثاقب نثا رنے استفسار کیا کہ کیافاٹااورپاٹادونوں ریگولیٹ ہوتے تھے؟ہائیکورٹ کافیصلہ آچکا،اس وجہ سے فیصلہ تحریرنہ کرسکے، ہائیکورٹ نے کیافیصلہ دیا؟ایڈووکیٹ جنرل نے کہا کہ عدالت نے قانون ختم کرکے ایک ماہ کاوقت دیاہے،ہماراایشو ہے کہ زیادہ مہلت دی جائے،چیف جسٹس نے کہا کہ پھرہم آپ کو 6 ماہ دے دیتے ہیں۔ایڈووکیٹ جنرل نے کہا کہ پہلے وہاں پولیٹیکل ایجنٹ کام کرتے تھے،اب پولیس چاہئے،چیف جسٹس نے کہا کہ خیبرپختونخواحکومت اپناموقف تحریری طورپردے، عدالت نے خیبرپختونخواحکومت سے(آج) تک جواب طلب کرلیا۔

سپریم کورٹ

مزید :

پشاورصفحہ آخر -