پرائیویٹ سکولوں کو ووچر سکیم کے واجب الوصول رقومات فی الفور ادا کی جائیں

پرائیویٹ سکولوں کو ووچر سکیم کے واجب الوصول رقومات فی الفور ادا کی جائیں

  

بخشالی (نمائندہ پاکستان)پرائیویٹ سکولوں کو ووچر سکیم کے واجب الوصول رقومات فی الفور ادا کی جائیں ریگولیرٹی اتھارٹی کی آڑ میں سرکار نے عرصہ دراز سے پرائیویٹ سکولوں کے بقایا جات روک لئے ہیں مہنگائی کے اس دور میں نجی تعلیمی اداروں کو سٹاف کی تنخواہیں اور بلڈنگ کے بھاری کرایہ جات ادا کرنے ہوتے ہیں تفصیلات کے مطابق گذشتہ صوبائی حکومت کا شروع کردہ اقراء فروع تعلیم ووچر سکیم کے تحت سٹریٹ چائلڈز کی ایک بڑی تعداد نجی تعلیمی اداروں میں تعلیم حاصل کر رہی ہے لیکن یہ پروگرام شروع ہی سے مختلف کلریکل اور مالی سست روی کی وجہ سے مختلف مسائل کا شکار رہا ہے تا ہم ان نجی تعلیمی اداروں کو وقتاً فوقتاًرقم ادا کی جاتی ہے لیکن اس دفعہ عرصہ دراز سے پرائیویٹ سکولوں کو ووچر سکیم کی مد میں رقم کی ادائیگی عمل میں نہیں لائی گئی باوثوق ذرائع کے مطابق بینک اکاونٹس اور ریگولیرٹی اتھارٹی رجسٹریشن کے نام پر متعلقہ سکولوں کو کئی قسطوں کی ادائیگی روک دی گئی ہے جس میں بکس اور یونیفارم کا بل بھی ادا نہیں کیا گیا جس کی وجہ سے اکثر کمزور اور مالی طور پر غیر مستحکم سکولوں نے سکیم کے بچوں کو بکس اور یونیفارم دونوں یا دونوں میں سے ایک فراہم نہیں کئے جس کا بچوں کی ذہنی کیفیت اور تعلیم پر نہایت منفی اثرات مرتب ہو رہے ہیں اس سلسلے میں جب مختلف نجی اداروں کے پرنسپلوں سے رابطہ کیا گیا تو انہوں نے وزیر اعلٰی ، چیف سیکرٹری خیبر پختونخواہ اور صوبائی وزیر تعلیم سے ہنگامی بنیادوں پرسکیم کے تحت بقایاجات کی ادائیگی کا مطالبہ کیا گیا ادائیگی کا مطالبہ کیا ۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -