سابق جج کی رشتہ دار کیخلاف کارروائیاں متاثرین کا پولیس چھاپوں کیخلاف مظاہرہ

سابق جج کی رشتہ دار کیخلاف کارروائیاں متاثرین کا پولیس چھاپوں کیخلاف مظاہرہ

  

کبیروالا+بارہ میل (تحصیل رپورٹر+نمائندہ پاکستان)نیب حکام کو کرپشن (بقیہ نمبر43صفحہ7پر )

کے مبینہ الزامات پر مبنی تحریری درخواست دینے اور میڈیا پر اپنے ساتھ ہونیوالے ظلم وزیادتی کو اچھالنے کی رنجش،سابق ڈسٹرکٹ سیشن جج بینکنگ کورٹ لاہور ر خضر حیات سیال کی مبینہ ایماء پرعبدالحکیم ،شورکوٹ،حویلی کورنگااور سرائے سدھوکی پولیس کی جانب سے ہراساں کئے جانے کے خلاف متاثرہ خاندان کے سربراہ کا اپنے خاندان کے معصوم بچوں کے خلاف احتجاجی مظاہرہ کیا ۔تفصیل کے مطابق موضع شہادت کندلہ کے رہائشی محمد اشرف سیال نے اپنے خاندان کے معصوم بچوں کے ساتھ سابق ڈسٹرکٹ سیشن جج بینکنگ کورٹ لاہور ر خضر حیات سیال کی مبینہ ایماء پرعبدالحکیم ،شورکوٹ،حویلی کورنگااور سرائے سدھوکی پولیس کی جانب سے ہراساں کئے جانے کے خلاف احتجاج کرتے ہوئے کہا ہے کہ سابق ڈسٹرکٹ سیشن جج بینکنگ کورٹ لاہور ر خضر حیات سیال نے خاندانی رقابت اور اپنے خلاف ’’کاروائی ‘‘ کیلئے کرپشن الزامات کے تحت نیب حکام کو تحریری درخواست دینے اور اپنے ساتھ ہونیوالے ظلم وستم کو میڈیا میں شائع کرانے کی رنجش میں اسکے خاندان کا جینا حرام کردیا ہے ،مذکورہ تھانوں کی پولیس دن رات انکی رہائشگاہوں پر ’’ریڈ ‘‘ کرکے انہیں مسلسل ہراساں کررہی ہے ،جس کا مقصد خوف کا شکار کرکے سابق ڈسٹرکٹ سیشن جج بینکنگ کورٹ لاہور ر خضر حیات سیال کے ساتھ صلح کرنے اور اسکے خلاف نیب حکام کو دی گئی تحریری درخواست واپس لینے کیلئے دباؤ ڈالنا ہے ۔متاثرہ خاندان کے سربراہ محمد اشرف سیال کے مطابق سابق ڈسٹرکٹ سیشن جج بینکنگ کورٹ لاہور ر خضر حیات سیال نے انتہائی قریبی رشتے دار ہے لیکن ان کے خلاف انتقامی کاررائیوں کرارہا ہے۔لہذا وزیر اعظم پاکستان،چیف جسٹس آف پاکستان ،وزیر اعلیٰ پنجاب سمیت دیگر حکام بالا صورت حال کا نوٹس لیکر انصاف فراہم کریں۔

مزید :

ملتان صفحہ آخر -