وزیر اعظم کا فاٹامیں ہیلتھ کارڈ جاری اور ترقیاتی سرگرمیوں سمیت پولیس میں بھرتیوں کا حکم

وزیر اعظم کا فاٹامیں ہیلتھ کارڈ جاری اور ترقیاتی سرگرمیوں سمیت پولیس میں ...

  

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک،آن لائن،آئی این پی) وزیراعظم عمران خان نے کہا ہے کہ فاٹا کے انضمام شدہ علاقوں کی تعمیر و ترقی اور ان علاقوں کو ملک کے دیگر حصوں کے برابر لانا اولین ترجیح ہے۔وزیراعظم عمران خان کی زیرصدارت فاٹا کی تعمیر و ترقی کے حوالے سے اعلیٰ سطح کا اجلاس ہوا جس میں وزیر خزانہ اسد عمر، گورنر خیبرپختونخوا شاہ فرمان، وزیراعلیٰ کے پی محمود خان، وزیراعظم کے مشیر شہزاد ارباب، معاون خصوصی افتخار درانی اور صوبائی وزیر خزانہ تیمور سلیم سمیت دیگر نے شرکت کی۔اجلاس میں انضمام شدہ علاقوں میں انتظامی امور، صحت، تعلیم ،امن امان سمیت ترقیاتی منصوبوں پر اب تک ہونے والی پیشرفت اور آئندہ 3 ماہ کے لائحہ عمل کا جائزہ لیا گیا۔اجلاس میں فیصلہ کیا گیا کہ صوبائی کابینہ ہر ماہ ترقیاتی کاموں اور اصلاحات پر پیشرفت کا جائزہ لے گی۔قبل ازیں وزیراعظم سے اوورسیز پاکستانیز کے وفد نے ممتاز مسلم کی سربراہی میں ملاقات کی ، وفد میں امجد علی خان، ماجد بشیر اور مصطفی قاسام شامل تھے۔سینیٹر فیصل جاوید نے وزیر اعظم کو ڈیم فنڈ ریزنگ ایونٹس کے حوالے سے تفصیلی بریفنگ دیتے ہوئے بتایا کہ وفد کے ممبران نے دبئی میں منعقد ہ ڈیم فنڈ ریزنگ میں 9لاکھ 18ہزار 510ڈالر دئیے۔ وزیر اعظم عمران خان نے وفد کے ممبران اور دیگر اوورسیز پاکستانیو ں کے فراخدلانہ عطیات اور جذبے کو سراہتے ہوئے کہا کہ ملک میں پانی کے ذخائر کی حفاظت وقت کی اہم ضرورت ہے۔ انہوں نے کہا کہ دیامیر بھاشا اور مہمند ڈیم فنڈ میں اندرون اور بیرون ملک سے جو ریسپانس ملا ہے اس کو مدنظر رکھتے ہوئے یہ امید کی جا سکتی ہے کہ یہ منصوبے مقررہ وقت سے بھی پہلے شروع ہو جائیں گے۔دریں اثناء وزیر اعظم عمران خان سے وفاقی وزیر اطلاعات ونشریات چودھری فواد حسین نے ملاقات کی، جس میں موجودہ سیاسی صورتحال سمیت مختلف امورپر تبادلہ خیال کیا گیا ۔ علاوہ ازیں وزیراعظم عمران خان کے زیر صدارت نیا پاکستان ہاؤسنگ پراجیکٹ کا اجلاس منعقد ہوا جس میں ہاؤسنگ ٹاسک فورس کی وزیراعظم کو پراجیکٹ پر اب تک ہونے والی پیش رفت پر تفصیلی بریفنگ دی گئی ۔ وزیر اعظم کو بتایاگیا کہ نیا پاکستان ہاؤسنگ اتھارٹی کے قیام کی منظوری کا مسودہ بہت جلد کابینہ کو پیش کر دیا جائے گا۔ بریفنگ میں کہاگیا کہ رئیل اسٹیٹ ریگولیٹری اتھارٹی کے قیام کاڈرافٹ بھی ایک ہفتے کے اندر پیش کر دیا جائیگا ،رئیل اسٹیٹ ریگولیٹری اتھارٹی کے قیام سے ریگولیٹری شعبے کو ڈویلپمنٹ سے علیحدہ کر دیا جائے گا ،سٹیٹ بنک آف پاکستان کی جانب سے سودی شرح کی تجاویز بہت جلد ٹاسک فورس کے ممبران سے شیئر کر لی جائیں گی۔ اجلاس کو بتایاگیا کہ فور کلوڑر لاز کو دو ہفتوں میں متعلقہ سٹیک ہولڈرز کی مشاورت کے بعد حتمی شکل دے دی جائے گی ،اربن ری جنریشن کے حوالے سے قانون کا مسودے کودو ہفتوں میں حتمی شکل دے دی جائے گی۔اس موقع پر وزیر اعظم نے صوبائی حکومتوں کو ہدایت کی کہ پراپرٹی کے حوالے سے زیر التوا قانونی کیسز میں جہاں تمام کوائف مکمل ہیں ان کو آئندہ 90 دن میں نمٹایا جائے۔اجلاس کے دور ان فیڈرل گورنمنٹ ایمپلائیز ہاؤسنگ فاؤنڈیشن کے تحت ڈیڑھ لاکھ سرکاری ملازمین کیلئے تعمیر کیے جانے والے مکانات پر پیش رفت پر بھی بریفنگ دی گئی ۔شرکاء کوبتایاگیا کہ ڈیڑھ لاکھ ملازمین کیلئے رہائشگاہوں کی تعمیر کیلئے اظہار دلچسپی کے اشتہار پر اب تک41 پرائیویٹ کمپنیوں کی جانب سے دلچسپی کا اظہار کیا گیا اور88 تجاویز جمع کرائی گئیں۔ ان میں سے 25کمپنیوں نے ایک مقام پر جبکہ 14کمپنیوں کی جانب سے مختلف مقامات پر مکانات کی تعمیر اور زمین کی فراہمی میں دلچسپی کا اظہار کیا گیا ہے ۔اس موقع پر وزیر اعظم نے کہا کہ50 لاکھ گھروں کی تعمیر کا منصوبہ حکومت کے اہم منصوبوں میں سر فہرست ہے جس سے نہ صرف گھروں کے مسئلے کو حل کرنے میں مدد ملے گی بلکہ معیشت کا پہیہ تیز ہوگا اور نوجوانوں کیلئے نوکریوں کے بے شمار مواقع میسر آئیں گے۔وزیر اعظم نے کہاکہ نیا پاکستان ہاؤسنگ پراجیکٹ سے متعلق تمام کاروائی کی رفتار کو مزیدتیز کیا جائے تاکہ پراجیکٹ پر عملی کام کا آغاز جلد کیا جا سکے۔بعدازاں وزیراعظم عمران خان سے پاکستان تحریک انصاف کے مرکزی سیکرٹری جنرل ارشد داد کی سربراہی میں پارٹی کی "گڈگورننس کمیٹی" نے ملاقات کی اورملک بھر سے بدانتظامی کے خاتمے اور عمدہ گورننس کے فروغ کی حکمت عملی پر وزیراعظم کو تفصیلی بریفنگ دی ۔گورنر پنجاب چودھری سرور، وفاقی وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی اور وزیر اعلی ٰپنجاب سردار عثمان بزدار بھی اس موقع موجود تھے ۔وزیراعظم کی جانب سے کمیٹی کو "گڈ گورننس" کے حوالے سے سفارشات کو حتمی شکل دینے،عمدہ گورننس کے عمل میں نوجوانوں کو بھرپور حصہ دینے،پنجاب کی انتظامی کمیٹیوں میں اہلیت اور مفادِ عامہ کیلئے خدمات سرانجام دینے میں دلچسپی کے حامل افراد کو موقع دینے اورصوبے، ضلع اور تحصیل کی سطح پر اہلیت کے حامل شہریوں کے چنا کا عمل جلد از جلد شروع کرنے کی ہدایت کی گئی ۔وزیر اعظم عمران خان نے پاکستان اور سعودی عرب کے درمیان تعلقات کو مزید مستحکم کرنے پر زور دیتے ہوئے کہا کہ پاکستان سعودی عرب کے ساتھ تعلقات کو انتہائی اہمیت دیتا ہے ۔ وہ پیر کو سعودی عرب کے سفیر نواف سعید المالکی سے ملاقات میں گفتگو کر رہے تھے ۔ ملاقات کے دوران پاکستان سعودی عرب سمیت دیگر اہم امور پر تفصیلی تبادلہ خیال کیا گیا ۔ اس دوران وزیر اعظم نے کہا کہ پاکستان سعودی عرب کے ساتھ اپنے تعلقات کو انتہائی اہمیت دیتا ہے اور قدر کی نگاہ سے دیکھتا ہے ۔ اس دوران انہوں نے دونوں ممالک کے درمیان تعلقات کو مزید مستحکم کرنے پر زور دیا ۔

وزیر اعظم/ حکم

اسلام آباد (سٹاف رپورٹر) وزیر اعظم عمران خان نے کہا ہے کہ 31 دسمبر 2018 تک صرف 60 دن میں پاکستان سٹیزن پورٹل کے ذریعے ایک لاکھ عوامی شکایات کا ازالہ کر دیا گیا ۔ پیر کو سال 2018 کے آخری دن سماجی رابطوں کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر اپنے ٹویٹ میں کہا کہ ملکی تاریخ میں عوامی شکایات پر تیز ترین کارروائی کی گئی اور سٹیزن پورٹل کے ذریعے ایک لاکھ شکایات کا ازالہ کیا گیا ۔ یہ تعداد ملکی تاریخ میں پہلی مرتبہ اتنی بڑی مقدار میں اتنے کم عرصے میں شکایات حل کی گئیں ۔ وزیر اعظم عمران خان نے شہریوں پر زور دیا کہ وہ شکایات پر موثر جواب کے لئے وزیراعظم ڈلیوری یونٹ کا استعمال کریں ۔

وزیر اعظم

مزید :

صفحہ اول -