بی آر ٹی منصوبہ اتارے گئے ،پیدل پل ایک سال کی طویل مدت کے بعد بھی نہ لگائے جاسکے

بی آر ٹی منصوبہ اتارے گئے ،پیدل پل ایک سال کی طویل مدت کے بعد بھی نہ لگائے ...

  

پشاور ( سٹی رپورٹر) بی آر ٹی منصوبے کے دوران اتارے گئے پیدل پل ایک سال کی طویل مدت کے بعد بھی نہ لگائے جا سکے بزرگ شہریوں اور خواتین کو سڑک پار کرنے کیلئے شدید مشکلات کا سامنا ہے دوسری طرف انڈر پاسز کے خاتمے کے بعد شہریوں کو جی ٹی روڈ پر ٹریفک کی روانی کے پیش نظر کافی انتظار کے بعد سڑک پار کرنے کا موقع ملتا ہے، جی ٹی روڈ پر بی ا?ر ٹی کوریڈور بھی انچائی پر بنایا گیا ہے جس کی وجہ سے پیدل چلنے والے والے شہری کوریڈور پھلانگ کر دوسری جانب نکلتے ہیں جبکہ خواتین کیلئے ایسا کرنا محال ہوتا ہے ، اسی طرح ہشتنگری ، فردوس کے انڈر پاسز کی تعمیر بھی نامکمل ہے جبکہ لاہور اڈہ اور سکندر پورہ میں لگے پیدل پل اتارنے کے بعد ابھی تک دوبارہ نہ لگ سکے ، اس حوالے سے شہریوں نے تشویش کا اظہار کیا ہے ایکسپریس سے بزرگ شہری نے بات کرتے ہوئے کہا کہ ایک سال کا طویل عرصہ گزرنے کیبعد ابھی تک پیدل پل کی تنصیب دوبارہ نہ ہو سکی جس کی وجہ پیدل چلنے والے افراد حادثات کا شکار ہوتے ہیں جبکہ دوسری جانب بس ، ٹیکسی ڈرائیورز بھی ایک منٹ کیلئے نہیں رکتے جس کی وجہ سے دیر تک سڑک عبور کرنے کیلئے انتظار کرتے ہیں انہوں نے وزیر اعلی سے مطالبہ کیا ہے کہ جلد از جلد پیدل پل اور انڈر پاسز کو فعال کیا جائے تا کہ شہریوں کو سڑک عبور کرنے میں ا?سانی میسر آئے

مزید :

صفحہ آخر -