2018میں ٹریفک پولیس کی کارکردگی بہتررہی ،انتخاب عالم سوری

2018میں ٹریفک پولیس کی کارکردگی بہتررہی ،انتخاب عالم سوری

  

کراچی(اسٹاف رپورٹر ) ہیومن رائٹس نیٹ ورک کے صدر انتخاب عالم سوری نے کہا ہے کہ سال 2018میں ٹریفک پولیس کی کارکردگی بہتر رہی ،مگرشہریوں کو بدنظمی کے باعث ٹریفک جام ،ہیو ی ٹریفک کے شہر میں بے وقت داخلے،نئی نمبرپلیٹس کے اجرا کی وجہ سے بھی مسائل کاسامنا کرنا پڑا ۔ان خیالات کا اظہارانہوں نے گزشتہ روز2018میں ٹریفک پولیس کی جانب سے جاری رپورٹ پراپنی آبزرویشن میں کہی۔انہوں نے کہا کہ ٹریفک پو لیس نے چالا ن ،جرمانہ ،ٹکٹس چالان ،ون وے کی خلاف ورزی ،سگنلز کی خلاف ورزی ،بلالائسنس ڈرائیونگ۔دوران ڈرائیونگ موائل فون کے استعمال سمیت دیگر قوانین کی خلاف ورزی پر کروڑوں کا ریونیو اکھٹا کر کے قومی خزانے میں جمع کروایا جو خوش آئند بات ہے ۔اس سے ثابت ہوتا ہے کہ ٹریفک پولیس نے اپنی ذمہ داریاں احسن طریقے سے انجام دینے کی کوشش کی ہے۔یہ بات انہوں نے اپنے ایک بیان میں کہی ،انتخاب عالم سوری نے کہا کہ ٹریفک نظام میں کئی خامیاں بھی پائی جاتی ہیں جن کی اصلا ح کی ضرورت ہے ،انہوں نے کہا کہ ٹریفک قوانین سے متعلق لوگوں میں شعور آگہی ضروری ہے ،شہر میں بے شمار بسیں فٹنس ٹیسٹ کے بغیرچل رہی ہیں ،یہ بسیں اتنی پرانی ہیں کہ مزید چلا ئے جانے کے قابل نہیں ،انہوں نے کہا کہ ٹریفک قوانین کی خلاف ورزیاں اب بھی جاری ہیں ۔ون وے اوردیگر قوانین سے متعلق آگہی کی ضرورت ہے۔انہوں نے کہا کہ گزشتہ برس ٹریفک اہلکار کی جانب سے رشوت طلب کرنے پر ایک رکشہ ڈرائیونے خوسدسوزی کرکے جان دیدی تھی ،اس طرح کے واقعات کی روک تھام کیلئے رشوت کلچر کو بھی ختم کرنا ہوگا ۔ انتخاب عالم سوری نے کہا کہ ٹریفک جام اور،ہیو ی ٹریفک کے شہر میں بے وقت داخلے سے شہری پریشان ہیں ،ان مسائل کو حل کرنا ہوگا۔

مزید :

راولپنڈی صفحہ آخر -