ایس بی سی اے سرجانی میں غیر قانونی شادی ہالوں کے خلاف کارروائی سے گریزاں 

ایس بی سی اے سرجانی میں غیر قانونی شادی ہالوں کے خلاف کارروائی سے گریزاں 

  



کراچی(رپورٹ٭ندیم آرائیں)سندھ بلڈنگ کنٹرول اتھارٹی نے سرجانی ٹاؤن کے علاقے میں غیر قانونی قائم ہونے والے شادی ہالوں کے خلاف کارروائی سے معذوری ظاہر کردی۔بھاری نذرانے کے عوض ایس بی سی اے کے افسران نے ان تعمیرات کے حوالے سے اپنی آنکھیں بند کی ہوئی ہیں۔ ڈپٹی ڈائریکٹر ایس بی سی اے سرجانی ٹاؤن شہزادرضا سیال نے اس ضمن میں حیرت انگیز موقف اختیار کرتے ہوئے کہا ہے کہ اخبارات میں خبریں لگتی رہتی ہیں ہم ہر خبر پر کارروائی نہیں کرسکتے ہیں۔تفصیلات کے مطابق سندھ بلڈنگ کنٹرول اتھارٹی کی کرپشن اور نااہلی کی داستانوں میں اضافہ ہوتاجارہا ہے۔گزشتہ روز رنچھوڑ لائن کے علاقے میں ایک چھہ منزلہ عمارت زمین بوس ہوگئی تھی،جس کے بارے میں یہ انکشاف سامنے آیا کہ مذکورہ جگہ پر صرف گراؤنڈ پلس ون بنانے کی اجازت تھی لیکن ایس بی سی اے افسران کی ملی بھگت سے وہاں 6منزلہ عمارت قائم کردی گئی تھی۔شہرمیں اس طرح کی لاتعدادغیر قانونی عمارتیں موجود ہیں،جن کی وجہ سے بڑے حادثات کا خدشہ ہے۔اسی طرح ایس بی سی اے کے حکام نے شہر کے مختلف علاقوں میں غیر قانونی شادی ہالوں کی تعمیرات کی اجازت بھی دی ہوئی ہے۔اس ضمن میں ”روزنامہ پاکستان“ نے سرجانی ٹاؤن کے علاقے  سیکٹر 4Dپلاٹ نمبرSB-482 اور سیکٹر5D پلاٹ نمبرSB-56 پر قائم غیر قانونی شادی ہالوں کی تعمیر کے حوالے سے نشاندہی کی تھی۔ان میں سے سیکٹر5Dپلاٹ نمبرSB-56پر بننے والے شادی ہال پر نمائشی کارروائی کرتے ہوئے ا س کا باہر کا کچھ حصہ گرادیا گیا لیکن اندر کی تعمیرات اپنی جگہ موجود رہیں  جبکہ سیکٹر4Dپلاٹ نمبرSB-482میں تعمیرات کا کام اور تیز کردیا گیا۔اس سلسلے میں نمائندہ روزنامہ پاکستان نے ایس بی سی اے سرجانی ٹاؤن کے ڈائریکٹر شہزاد رضاسیال سے رابطہ کیا تو انہوں نے اس کی عجیب منطق پیش کی۔انہوں نے کہا کہ اخبارات میں اس طرح کی خبریں لگتی رہتی ہیں ہم ہر خبر پر کارروائی نہیں کرسکتے ہیں۔ہم نے مذکورہ ہال کو پہلے منہدم کیا مگر ہال کے مالک نے دوبارہ تعمیرات شروع کردی جس کے بعد ہم نے ہال کو سیل کردیا اب اس کے باوجود وہ تعمیرات کررہا ہے ہم نے علاقہ ایس ایچ او کو بھی لکھا ہے اور ہم ان کے خلاف عدالت جانے کا بھی سوچ رہے ہیں ان سے جب پوچھا گیا کہ اب تو شادی ہال تکمیل کے آخری مراحل میں ہے اور عنقریب مکمل ہونے کے بعد یہاں تقریبات بھی شروع ہوجائیں گی آپ اب تک تو عدالت گئے نہیں اور ابھی بھی جانے کا سوچ رہے ہیں تو اس کا کیا مطلب لیا جائے،ڈپٹی ڈائریکٹر اس سوال کاکوئی خاطر خواہ جواب نہ دے سکے۔زرائع کا کہنا ہے کہ شادی ہال کی جانب سے آنکھیں بند رکھنے کے ایس بی سی اے کے اعلیٰ افسران کو بھاری نذرانے دیے گئے ہیں۔واضح رہے کہ سرجانی ٹاؤن میں شادی ہالوں کے علاوہ دیگر غیر قانونی تعمیرات بھی جاری ہیں اور بلڈر مافیا ایس بی سی اے کے متعلقہ افسران کو اس ضمن میں لاکھوں روپے ماہانہ رشوت دیتے ہیں،جس کے بعد انہیں عوام کے جانوں سے کھیلنے کی کھلی اجازت دے دی جاتی ہے۔

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر


loading...