سندھ ہائیکورٹ نے چیف ایگزیکٹو افسر پی آئی اے ارشد ملک کو کام کرنے سے روکدیا 

سندھ ہائیکورٹ نے چیف ایگزیکٹو افسر پی آئی اے ارشد ملک کو کام کرنے سے روکدیا 

  



کراچی (سٹاف رپورٹر)سندھ ہائیکورٹ نے چیف ایگزیکٹو افسر پی آئی اے ائیر مارشل ارشد ملک کو کام کرنے سے روکدیا۔ ارشد ملک کیخلاف سینئرسٹاف ایسوسی ایشن (ساسا) کے جنرل سیکریٹری صفدر انجم نے سندھ ہائیکورٹ میں درخواست دائر کی۔ درخواست میں مؤقف اختیار کیا گیا کہ ائیر مارشل ارشد ملک تعلیمی معیار پر پورا نہیں اترتے اور ان کا ائیر لائن سے متعلق کوئی تجربہ نہیں ہے۔سندھ ہائیکورٹ کے 2 رکنی بنچ نے ائیرمارشل ارشد ملک کی تعیناتی کے خلاف درخواست کی سماعت کی۔ سماعت کے دوران عدالت نے ائیرمارشل ارشد ملک کو کام کرنے سے روک دیا جبکہ پی آئی اے میں نئی بھرتیوں، ملازمین کو نکالنے اور تبادلے سے بھی روک دیا۔عدالت کے حکم کے مطابق بورڈ آف ڈائریکٹر اور ایچ آر پی آئی اے میں خریدو فروخت پالیسی اور ایک کروڑ سے زائد کے اثاثے بھی فروخت نہیں کرسکتے۔عدالت نے ڈپٹی اٹارنی جنرل کو 22 جنوری کے لیے نوٹس جاری کرتے ہوئے جواب طلب کرلیا۔

ارشد ملک 

مزید : صفحہ اول


loading...