مدینہ کی عمارتوں کی قیمتوں میں مزید اضافہ، وزارت مذہبی امور کو سرکاری حج سکیم کا پیکج فائنل کرنے میں مشکلات

  مدینہ کی عمارتوں کی قیمتوں میں مزید اضافہ، وزارت مذہبی امور کو سرکاری حج ...

  



لاہور(ڈویلپمنٹ سیل)حج کرایہ فائنل نہ ہو سکا،مکہ،مدینہ کی عمارتوں کی قیمتوں میں مزید اضافہ،وزارت مذہبی امور کو سرکاری حج سکیم کا پیکج فائنل کرنے میں سخت مشکلات کا سامنا،حج پالیسی 2020ء کا اعلان مزید تاخیر کا شکار،وزارت مذہبی امور نے پہلے دسمبر کے آخر میں پھر جنوری کے پہلے ہفتے حج پالیسی دینے کی تجویز دی تھی اب وفاقی کابینہ کے اجلاس میں منظوری کے لیے جنوری کے آخر میں پیش کیے جانے کا امکان ہے،معلوم ہوا ہے کہ ائیر لائنز اور وزارت کے درمیان حج کرایہ کے حوالے سے ڈیڈ لاک ابھی تک برقرار ہے،وزارت مذہبی امور 10فیصد سے زیادہ کرایہ بڑھانے کے لیے تیار نہیں،سعودی حکومت نے حج2020ء میں ہر حاجی کے لیے حج ویزہ فیس 300ریال اور انشورنس فیس 110ریال عائد کر دی ہے،مکہ،مدینہ کی عمارتوں کے حوالے سین نئے ڈی جی اور ڈائریکٹر نے جو قیمتیں تجویز کی ہیں وہ بھی گزشتہ سال سے زیادہ ہیں،3سے4روپے ریال بھی بڑھ چکا ہے ان امور کے فائنل نہ ہونے کی وجہ سے حج پیکج فائنل نہیں ہو رہاجس کی وجہ سے حج پالیسی کا اعلان تاخیر کا شکار ہو رہا ہے،پرائیویٹ حج سکیم کی پالیسی مزید تاخیر کا شکار ہو سکتی ہے کیونکہ وزارت مذہبی امور ابھی نئی انرول کمپنیوں کی اسسمنٹ کروانے کے لیے آڈٹ فرم کا چناؤ کر رہی ہے، ڈیڑھ سے دو ماہ انہیں لگیں گے،ذرائع نے کہا کہ وزارت مذہبی امور کی کوشش ہے کہ حج کرایہ فائنل ہوتے ہی حج پالیسی حج فارمولیشن کمیٹی میں پیش کر دی جائے گی اور پھر فائنل ہوتے ہی منظوری کے لیے وفاقی کابینہ کے اجلاس میں پیش کر دی جائے گی۔ 

یکج فائنل

مزید : صفحہ آخر


loading...