قائمہ کمیٹی منصوبہ بندی نے سی پیک اتھارٹی کو چیلجن کرنے سے استثنی دینے کی منظوری دیدی 

    قائمہ کمیٹی منصوبہ بندی نے سی پیک اتھارٹی کو چیلجن کرنے سے استثنی دینے کی ...

  



اسلام آباد(این این آئی)قومی اسمبلی کی قائمہ کمیٹی برائے منصوبہ بندی نے سی پیک اتھارٹی کو عدالتوں میں چیلنج کرنے سے استثنیٰ دینے کی منظوری دے دی۔ منگل کو قومی اسمبلی کی قائمہ کمیٹی برائے منصوبہ بندی کا اجلاس ہوا جس میں سی پیک اتھارٹی آرڈیننس کا جائزہ لیا گیا۔ وزارت منصوبہ بندی کے حکام نے بریفنگ دیتے ہوئے بتایا کہ اتھارٹی خود اپنے لیے ریگولیشن بنائے گی، ای سی سی میں اس اتھارٹی کیلئے بجٹ کی منظوری لی جائیگی، اتھارٹی کے دس ارکان ہوں گے۔وزارت قانون کے حکام نے سی پیک اتھارٹی کو استثنیٰ دینے کی درخو ا ست کرتے ہوئے کہا کہ سی پیک اتھارٹی کے فیصلوں کو کسی عدالت میں چیلنج نہیں کیا جاسکتا۔ارکان اسمبلی نے سوال اٹھایا کہ کیا یہ عدالتوں پر عدم اعتماد نہیں ہوگا اس پر حکام نے کہا کہ عدالتوں میں چیلنج نہ کئے جانے کے استثنیٰ کے باوجود اتھارٹی غلط کام پرجوابدہ ہوگی، اگر کرپشن کے ثبوت موجود ہوں گے تو عدالت ایکشن لے سکے گی، اتھارٹی کے خلاف لامحدود استشنیٰ نہیں دیا گیا۔قائمہ کمیٹی نے سی پیک اتھارٹی کوعدالتوں میں چیلنج کرنے سے استشنیٰ دینے کی منظوری دیتے ہوئے قرار دیا سی پیک کی تذویراتی اہمیت کے پیش نظر یہ فیصلہ کیا جارہا ہے۔

سی پیک اتھارٹی

مزید : صفحہ آخر


loading...