2019ء مجرموں کی بیخ کنی کا سال، 46157گرفتار، لاہور پولیس

2019ء مجرموں کی بیخ کنی کا سال، 46157گرفتار، لاہور پولیس

  



لاہور (کرائم رپورٹر)لاہور پولیس کی طرف سے جاری کی جانے ہونے والی تفصیلات کے مطابق سال 2019میں جرائم کے خاتمہ اور مجرموں کی بیخ کنی کیلئے بھر پور اقدامات عمل میں لائے گئے۔لاہور پولیس نے جرائم پیشہ افراد کے خلاف کارروائی کرتے ہوئے مجموعی طور پر 46157ملزمان کو گرفتار کیا۔سال بھر کے دوران871 ڈکیت گینگز کے 2090 ارکان کو گرفتار کر کے شہریوں سے لوٹی گئی15کروڑ 50لاکھ روپے سے زائدمالیت کا مسروقہ مال اوررقم برآمد کر کے ورثاکے حوالے کی گئی۔ملزمان سے دورانِ تفتیش مزید2267 مقدمات ٹریس کئے گئے۔ ناجائز اسلحہ کے خلاف گرینڈ آپریشن کے دوران5285 ملزمان گرفتارکر کے ان کے قبضہ سے 65کلاشنکوف،260 رائفلز،203 بندوقیں،4108 پسٹلز،05 کاربین،85خنجر اورہزاروں کی تعداد میں گولیاں برآمد کی گئیں اور متعلقہ تھانوں میں 5270مقدمات درج کئے گئے۔ منشیات فروشوں کے خلاف کریک ڈاؤن کے دوران سال بھر میں مجموعی طورپر7253 ملزمان کوگرفتارکیا گیا جن کے قبضہ سے82کلوگرام سے زائد ہیروئن،2326کلوگرام سے زائد چرس،06کلو گرام سے زائد آئس،177کلوگرام سے زائد افیون اور01 لاکھ98 ہزار لٹرسے زائد شراب برآمد کی گئی۔ سال 2019میں تمام ڈویڑنل ایس پیز کو قمار بازی میں ملوث ملزمان کے خلاف خصوص مہم چلانے کا حکم دیا گیا تھا جس کے تحت 974 مقدمات درج کر کے 5089 ملزمان کو گرفتار کیا گیا۔ قمار بازوں کے قبضہ سے داؤ پر لگی 01 کروڑ 11لاکھ روپے سے زائدٹکڑی رقم برآمدکی گئی۔ اسی طرح قحبہ خانوں کے خلاف کارروائی کے دوران 1153 ملزمان گرفتار کر کے513 مقدمات درج کر لیئے گئے۔مزید برآں سنگین جرائم میں ملوث اشتہاری و عادی مجرمان کی گرفتاری کیلئے خصوصی ٹیموں نے کیٹیگری اے کے217،کیٹیگری بی کے4880اشتہاری مجرمان اور4386 عدالتی مفروران گرفتار کئے۔لوکل اینڈ سپیشل لاء کے تحت4934 پتنگ بازوں،2638ون ویلرزاورہوائی فائرنگ میں ملوث469ملزمان کو گرفتار کیا گیا۔ اسی طرح لاؤڈاسپیکر،گداگری، پرائس کنٹرول، فارنرز اورمیرج ایکٹ کی خلاف ورزی پر7763ملزمان کوبھی گرفتار کیاگیا۔ڈی آئی جی آپریشنز لاہور رائے بابر سعید نے کہاہے سال 2020 ء میں لاہور پولیس آپریشنز ونگ کو سمارٹ پولیسنگ کے اصولوں پر استوار کرنے اورخدمت خلق کے جذبے کے تحت سروس ڈیلیوری مزید بہتر بنانے کیلئے موثر اقدامات عمل میں لائیں گے۔

مجرموں کی بیخ کنی

مزید : علاقائی


loading...