نیا سال،قیافے اور اندازے

نیا سال،قیافے اور اندازے
 نیا سال،قیافے اور اندازے

  



پر اسرار علوم کی کوئی سائنسی اور علمی حیثیت نہیں اس کے باوجود دنیا کی بھاری اکثریت ان پر اعتقاد رکھتی ہے، علم نجوم، ہاتھ کی لکیریں، ستاروں کی چال، علم جفر، مبارک ہندسہ اور پتھر یہ سب علوم زمانہ قدیم سے مروج ہیں اور شاید قیامت تک موجود رہیں گے۔ مملکت خداداد کی جو صورتحال ہے اس کے حوالے سے کوئی قیاس آرائی حتمی طور پر نہیں کی جا سکتی البتہ عالمی حالات دن بدن دلچسپ صورتحال اختیار کرتے جا رہے ہیں۔

دنیا کے معروف ماہرین فلکیات اور نجوم کی آنے والے سال کے حوالے سے امیدوں اور قیافوں پر نظر ڈالیں تو معروف خاتون پامسٹ سارہ کا کہنا ہے کہ نیا سال پوری دنیا کو تبدیل کر کے رکھ دے گا، نئی نسل تیزی سے آگے بڑھے گی اور دنیا میں امن کی کوششوں میں ہاتھ بٹائے گی، نئی نسل اپنی تخلیقی سرگرمیوں سے بھی دنیا کو حیران کر دے گی۔ معروف ماہر فلکیات سٹیون فروسٹ کا کہنا ہے کہ نیا سال بہت رومانٹک اور پیشہ وارانہ صلاحیتوں کی کامیابی کا سال ہو گا، یہ بہت سے لوگوں کی زندگی بدل کر رکھ دے گا، جذباتی لوگ بہت سے چیلنجوں کو قبول کریں گے۔ بین الاقوامی خاتون ماہر فلکیات پیٹریکا لینٹرزکے مطابق نئے سال میں دنیا بے خوف و خطر کامیابیاں سمیٹے گی۔ برطانوی خاتون پامسٹ ڈیمرا جارج کا کہنا ہے کہ نیا سال شاندار ہو گا، لوگوں کی زندگی میں انقلابی تبدیلیاں آئیں گی،گزشتہ سالوں میں محنت کرنے والوں کوصلہ ملے گا۔ امریکی ماہر فلکیات رابرٹ ہینڈ سال نو کے بارے میں کہتے ہیں اس سال خواب دیکھنے والوں کو شکست ہو گی،کامیابی ان کا مقدر بنے گی جو حقیقت کا سامنا کرنے کا حوصلہ رکھتے ہونگے۔

نیا سال امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے زوال کی نشاندہی کر رہا ہے، ان کے خلاف مواخذے کی تحریک کی کامیابی ناکامی کے امکانات برابر برابر ہیں مگر آئندہ الیکشن میں ان کی کامیابی مشکوک دکھائی دے رہی ہے، آنے والے سال میں ٹرمپ کی مقبولیت میں بھی کمی کے آثار ہیں۔ بھارتی پامسٹ سنیتا منون کے مطابق نیا سال کچھ ملکوں کے درمیان پرانی دشمنی کو ہوا دیگا، ہندو ہونے کے باوجود یہ کہنے میں وہ کوئی ہرج نہیں سمجھتی کہ بھارت میں نئے سال میں مسلمانوں کی قوت زور پکڑے گی، جس سے مغربی دنیا کو پریشانی لاحق ہو جائے گی، البتہ مودی بعض معاملات میں اگر ہٹ دھرمی اور ضد چھوڑ دیں توخطے کے لوگوں میں خوشحالی آسکتی ہے، سنیتا کی قیافہ شناسی اپنی جگہ، مگر مودی کی پالیسیوں سے بھارت کی نظریاتی تقسیم تو ہو چکی، بھارتی شہری طبقات ہی نہیں گروہوں میں بٹ چکے ہیں اور اب بھارت کے جغرافیے میں بھی تبدیلی کے آثار نمایاں ہیں، متنازع شہریت بل کی تباہ کاری نئے سال میں جاری رہے گی، اگر مودی نے مقبوضہ کشمیر میں ظلم ستم اور جبر کا سلسلہ ختم نہ کیا تو نہ صرف پاک بھارت جنگ چھڑ سکتی ہے بلکہ بھارت کی دیگر ریاستوں خاص طور پر مشرقی پنجاب، مغربی بنگال، آسام، اترپردیش، مدھیا پردیش میں بھی علیحدگی کی تحریک سر اٹھا سکتی ہے، مسلم مخالف شہریت بل کے نتیجے میں مودی حکومت کا خاتمہ اور سونیا گاندھی کے بر سر اقتدار آنے کا بھی امکان ہے۔

ماہرین فلکیات کی پیش گوئی کے مطابق نریندر مودی قتل بھی ہو سکتے ہیں، اس صورتحال سے بھارتیوں کی توجہ ہٹانے کیلئے بھارت پاکستان پر کنٹرول لائن اور سیالکوٹ سیکٹر سے حملہ بھی کر سکتا ہے جس کیلئے ایل او سی پر نصب باڑ کو کم از کم پانچ مقامات سے کاٹ دیا گیا اور سرحد پر میزائل سسٹم نصب کر دیا گیا ہے۔ اگر ایسا ہوا تو اس کے نتائج بہت بھیانک برآمد ہونگے، یہ جنگ روائتی نہیں ہو گی، اور اگر ایٹمی ہوئی تو نقصان کا اندازہ نہیں لگایا جا سکے گا صرف پاکستان اور بھارت اس سے متاثر نہیں ہونگے، بلکہ دیگر ہمسایہ ممالک بھی اس سے متاثر ہونگے، تاہم اس جنگ کے بعد بھارت کی جغرافیائی سرحدیں بھی تبدیل ہو سکتی ہیں۔

پراسرار علوم کے مختلف پاکستانی ماہرین کا کہنا ہے کہ جب زوال آتا ہے تو وہ ستاروں کی چال سے شروع ہوتا ہے، وزیر اعظم عمران خان کا یوم پیدائش 25نومبر ہے اس کے مطابق ان کیلئے آئندہ سال مئی کا مہینہ انتہائی اہم ہے، اس مہینے میں ان کو بہت سوچ سمجھ کر سیاسی چالیں چلنا ہونگی، البتہ اکتوبر ان کیلئے مشکلات لائے گا، خاص طور پر 5اکتوبر اس حوالے سے انتہائی نازک ہے اس روز نہائت سوچ بچار سے فیصلے کرنا ہونگے، البتہ یہ وقت بخیریت گزر گیا تو 25اکتوبر تک وہ بہتر پوزیشن میں آجائیں گے، وزیر اعطم کی ازدواجی زندگی بھی ستاروں کی چال کے حساب سے خوشگوار رہے گی اور ماہرین کے مطابق ان کی ازدواجی زندگی محفوظ حصار میں ہے۔ ماہرین علم نجوم کے مطابق نواز شریف کی زندگی میں رکاوٹیں اور بندشیں اب بھی موجود ہیں، ان کا سیاسی مستقبل بھی ختم ہو چکا، ان کی زندگی کو بھی خطرات لاحق ہیں، نئے سال میں ان کی پاکستان واپسی کا کوئی امکان دکھائی نہیں دے رہا، مستقبل قریب میں کسی عوامی عہدے پر ان کی تعیناتی بھی مشکل دکھائی دیتی ہے، نئے سال میں شہباز شریف کو بھی آمدن سے زائد اثاثوں کے کیس میں سزا ہو سکتی ہے، نواز،شہباز کی جگہ لینے کیلئے مریم نواز اور حمزہ شہباز کی تیاری مکمل ہے، مگر دونوں کے درمیان پالیسی میں اختلاف دکھائی دیتا ہے جس کا نقصان پارٹی کو ہو گا، (ن) لیگ کے متعدد اہم رہنماؤں کا نیب کے شکنجے میں آنے اور سزا پانے کی بھی نشاندہی ہو رہی ہے۔

پیپلز پارٹی کے چئیرمین آصف زرداری کی بیماری کے شدت اختیار کرنے اور علاج کیلئے بیرون ملک جانے کا بھی امکان ہے، زرداری کی زندگی کو بھی خطرات کا سامنا رہے گا، نئے سال میں بلاول بھٹو کھل کر سیاست کریں گے، اور فرنٹ فٹ پر آکر کھیلنے کی قیمت بھی انہیں ادا کرنا ہو گی، جون جولائی ان کیلئے مشکل ہیں، یہ دو ماہ میں بخیریت گزر گئے تو ان کی سیاست کو چار چاند لگ سکتے ہیں، مگر اس کیلئے انہیں بڑی قربانی دینے پر تیار رہنا ہو گا، حکومت اور اپوزیشن میں تناؤ اس سال بھی شدید رہے گا، جس کے نتیجے میں حکومت کوقانون سازی میں مشکلات پیش آئیں گی،کرپشن کے مقدمات میں کمی آئے گی، مگر نیب کا کردار اہم رہے گا، مہنگائی میں اضافہ ہو گا مگر معیشت مستحکم ہو گی اور حکومت کی طرف سے قوم سے کئے گئے وعدوں پر عمل درآمد کا سلسلہ بڑی تیزی سے شروع ہوگا، سیاسی کشیدگی عروج پر رہے گی، تعاو ن کے راستے بھی کھلیں گے مگر اپوزیشن کی شرائط پر۔

قارئین یہ سب تو قیافے،قیاس اور اندازے ہیں اللہ پاک ملک اور قوم پر رحم فرمائے اور نیا سال ملک و قوم کیلئے خوشیاں اور خوشحالی لائے۔آمین

مزید : رائے /کالم


loading...