”جو بھی شخص یہ کام کرے گا اسے 70 لاکھ ریال جرمانہ ہو گا“ سعودی عرب نے واضح اعلان کر دیا

”جو بھی شخص یہ کام کرے گا اسے 70 لاکھ ریال جرمانہ ہو گا“ سعودی عرب نے واضح ...
”جو بھی شخص یہ کام کرے گا اسے 70 لاکھ ریال جرمانہ ہو گا“ سعودی عرب نے واضح اعلان کر دیا

  



ریاض(ویب ڈیسک) سعودی عرب کی پبلک پراسیکیوشن نے کہا ہے کہ بینکوں میں رقم جمع کراتے وقت کھاتہ داروں کو یہ بتانا ہوگا کہ رقم کہاں سے حاصل ہوئی ہے اور غلط معلومات فراہم کرنے پر سزا ہوگی۔پبلک پراسیکیوشن نے ٹویٹ کرتے ہوئے توجہ دلائی ہے کہ بینک قوانین و ضوابط کے مطابق کھاتہ داروں کے لیے یہ بتانا لازمی ہے کہ اکاﺅنٹ میں جمع کرائی جانے والی رقم کہاں سے اورکیسے حاصل ہوئی ہے۔پبلک پراسیکیوشن نے بتایا کہ منی لانڈرنگ کا جرم ثابت ہوجانے پر 70 لاکھ ریال تک جرمانہ یا 15 برس تک قید یا دونوں سزائیں دی جاسکتی ہیں۔ منی لانڈرنگ میں استعمال ہونے والی رقم بھی ضبط کرلی جائے گی۔

مزید : عرب دنیا