سینئر تجزیہ کار عارف نظامی نے وزیراعظم کو محتاط رہنے کا مشورہ دے دیا

سینئر تجزیہ کار عارف نظامی نے وزیراعظم کو محتاط رہنے کا مشورہ دے دیا
سینئر تجزیہ کار عارف نظامی نے وزیراعظم کو محتاط رہنے کا مشورہ دے دیا

  



اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)سینئر تجزیہ کار عارف نظامی نے کہا ہے کہ عمران خان کو یہ بات یاد رکھنی چاہیے کہ آج تک پاکستان میں کسی بھی منتخب ہونے والے وزیراعظم نے آج تک اپنی مدت پوری نہیں کی لہذا نہیں قدم پھونک پھونک کر رکھنا ہونگے۔

ان کا کہنا تھا کہ عمران خان کو اپنے اتحادیوں کے ساتھ اچھے تعلقات قائم رکھنے چاہئیں،ایسا نہ ہو کہ ان کے اتحادی ہی ان کیے لیے مشکلات پیدا کر دیں۔ انہوں نے کہا کہ اپوزیشن کی نشستوں کی تعداد اچھی خاصی ہے۔ کہیں یہ نہ ہو کہ عمران خان کو ایک مرتبہ پھر جہانگیر ترین کی خدمات حاصل کرنی پڑ جائیں کہ وہ عمران خان کو حکومت برقرار رکھنے کے لئے مزید ارکان اسمبلی لا کر دیں۔عارف نظامی کا نیشنل اسمبلی کی نشستوں پرتبصرہ کرتے ہوئے کہنا تھا کہ پی ٹی آئی کی اپنی نشستیں 156 ہیں، باقی ان کے پاس اتحادی نشستیں ہیں۔ اپوزیشن کے پاس 159 نشستیں ہیں جس کا مطلب ہے کہ اپوزیشن کو وفاق میں حکومت بنانے کے لئے 13 نشستیں درکار ہیں۔ اتحادی نشستوں کی بات کرتے ہوئے عارف نظامی کا کہنا تھا کہ نیشنل اسمبلی میں ایم کیو ایم کی 7 نشستیں ہیں، مسلم لیگ ق کی 5 ہیں جب کہ بی این پی مینگل کی 4 نشستیں ہیں۔ عارف نظامی کا تجزیہ کرتے ہوئے کہنا تھا کہ اگر اپوزیشن کے ساتھ ایم کیو ایم مل گئی تو عمران خان کے لئے مشکل وقت کا آغاز ہو سکتا ہے۔

مزید : قومی


loading...