پاکستان کے واحد نابینا جج شادی کے بندھن میں بندھ گئے

پاکستان کے واحد نابینا جج شادی کے بندھن میں بندھ گئے
پاکستان کے واحد نابینا جج شادی کے بندھن میں بندھ گئے

  



لاہور(ڈیلی پاکستان آن لائن ) پاکستان کے پہلے اور واحد نابینا جج یوسف سلیم دولہا بن گئے۔یوسف سلیم کی شادی 30 دسمبر اور ولیمہ 31 دسمبر کو گارڈن ٹاون کے مقامی ہوٹل میں ہوا۔لاہور سے تعلق رکھنے والے یوسف سلیم نے 2014میں پنجاب یونیورسٹی سے ایل ایل بی آنرز میں گولڈ میڈل حاصل کیا تھا۔یوسف سلیم پیدائشی نابینا ہیں اور ان کی چار بہنوں میں سے بھی دو نابینا ہیں۔2018ءمیں لاہور میں سول ججز کے امتحانات میں یوسف سلیم نے اول پوزیشن حاصل کی تھی لیکن نابینا ہونے کی وجہ سے سلیکشن کمیٹی نے انہیں مسترد کر دیا۔

تاہم سابق چیف جسٹس آف پاکستان ثاقب نثار نے خصوصی دلچسپی لیتے ہوئے لاہور ہائیکورٹ کو آنکھوں کی بصارت سے محروم جج کو سول جج کی بھرتی کے لیے دوبارہ جائزہ لینے کا حکم دیا تھا۔واضح رہے کہ پاکستان کی تاریخ میں پہلی بار متعین ہونے والے نابینا سول جج نے تین ماہ میں شاندار کارکردگی کا مظاہرہ کرتے ہوئے متعدد کیسز نمٹا دئیے تھے۔پاکستان کے پہلے نابینا سول جج یوسف سلیم نے اپنے ابتدائی تین ماہ میں 20 کیسز کا فیصلہ سنا کر تاریخ رقم کردی تھی۔

مزید : علاقائی /پنجاب /لاہور