الپوری، بیشتر سرکاری ملازمین چار کول، فائیر ووڈ سے محروم 

الپوری، بیشتر سرکاری ملازمین چار کول، فائیر ووڈ سے محروم 

  

الپوری(ڈسٹرکٹ رپورٹر)شانگلہ سردیاں گزرنے کو ہیں، بیشتر سرکاری ملازمین چار کول، فائیر ووڈ سے محروم،موسم کی شدید سردی اور دفتری کام و کاج کے دوران ملازمین سخت بد حالی کا شکار ہیں جبکہ کئی محکموں نے موسم سرما شروع ہوتے ہی چار کول فائیر ووڈ کا ٹینڈر کرکے اپنے ملازمین کو حکومت کی دی گئی اس سہولت سے مستفید کیا تا ہم بیشتر محکموں کے ملازمین تا حال حکومت کے چائیر کول فائیرووڈ کی سہولت سے استفادہ کے منتظر۔تفصیلات کے مطابق شانگلہ جیسے بالائی اضلاع میں سرکاری ملازمین کو ہر سال کے سرد چارماہ کیلئے حکومت چارکول، فائیر ووڈ کے مد میں خطیر رقم فراہم کرتی ہے مگر بدقسمتی سے شانگلہ میں شروع ہی سے یہ فنڈ مخصوص ٹھیکیداروں کے چنگل میں چلا جاتا ہے اور باقاعدہ طورپر ہر سال ہی اس میں بھاری بد عنوانیاں بھی ہوتی ہیں جس پر کئی بار ان سرکاری ملازمین نے احتجاج کرکے سڑکوں پر نکل آئے اور اپنے جائز حق کا مطالبہ کیا مگر کچھ نہ ہوسکا اور کئی بار ایسا بھی ہوا کہ سیاسی رسہ کشی ملازمین کی ہٹ دھرمی اور انتظامیہ کی غفلت کی وجہ سے سرکاری ملازمین اس حق سے مکمل طور پر محروم رہے جس کا سارا نقصان نچلی سطح کے ملازمین درجہ چہارم، چوکیدار، کلرکس کو ہوا۔ اس سال بھی شانگلہ میں سخت سردی کی دو ماہ گزر گئی جبکہ دو ماہ یعنی جنوری اور فروری باقی ہیں میں ان کو یہ چار کول دینا ہے،ان چارکول، فائیر ووڈ کیلئے ٹینڈر ہوا جس میں کچھ ٹھیکیداران نے عدالتوں سے رجوع کیا اور دوسرے ٹینڈر میں کچھ مخصوص ٹھیکیداران کو حسب سابقہ نواز نے کیلئے وہ شرائط رکھے گئے جو صر ف وہ پورا کرسکتے ہیں اور وہ بھی ایک دوسرے کے ساتھ ملی بھگت کے حامی ہیں۔سرکاری ملازمین اور عوامی حلقے اس سال کے فائیر ووڈ چارکول کے ٹینڈر میں مبینہ بد عنوانیوں اور تا خیر کی سراسر ذمہ داری ضلعی انتظامیہ پر عائید کرتی ہے، تاہم انتظامیہ ان سے اتفاق نہیں کرتی۔شانگلہ میں تین چار سال پہلے چارکول فائیر ووڈ کا مسئلہ سر اٹھانے لگا اور ملازمین اپنے حق کیلئے دوڑ نکلے تو اس وقت کے ڈپٹی کمشنر نے اپنے اختیارات استعمال کرکے ان کی خریداری اوپن مارکیٹ سے کرنے کے احکامات جاری کئے جس کے نتیجے میں سرکاری ملازمین کو فائدہ ہوا۔ چار کول فائیر ووڈ ٹینڈر کے بجائے ان چار ماہ کی تنخواہوں میں ضم کیا جائے تو ایک طرف ملازمین کو ان کا صحیح حق بروقت ملتا رہے گا تو دوسری طرف ٹینڈر کی ضرور نہیں پڑے گی اور بد عنوانیوں کا خاتمہ سمیت کو غیر حقدرار ملازمین کو روک دیا جاسکے گا۔ اس حوالے سے ملازمین کے مختلف تنظیموں کے عہدیداران نے بتایا کہ چترال سمیت کئی بالا ئی اضلاع میں چارکول، فائیر ووڈ کے رقومات ووڈ ایڈ جسٹمنٹ کی مد میں چار ماہ کی تنخواہوں میں دی جاتی ہے جو شانگلہ میں بھی مروج کرنا چاہئے۔۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -