سندھ حکومت کا پولیس رولز میں اصلاحات کرنے کا فیصلہ 

 سندھ حکومت کا پولیس رولز میں اصلاحات کرنے کا فیصلہ 

  

کراچی(آئی این پی)حکومت سندھ کے ترجمان نے کہا ہے کہ صوبے میں پولیس رولز اور جیل اصلاحات کا فیصلہ کیا گیا ہے۔حکومت سندھ کے ترجمان اور مشیر قانون، ماحولیات و ساحلی ترقی مرتضی وہاب کی جانب سے جاری بیان میں کہا گیا کہ ایڈیشنل سیکریٹری داخلہ اور آئی جی سندھ پولیس نے ان سے ملاقات کی اور اس دوران پولیس رولز اور جیلوں کی اصلاحات پر تبادلہ خیال کیا گیا۔مرتضی وہاب کا کہنا تھا کہ حکومت سندھ نے پولیس رولز میں اصلاحات کا فیصلہ کیا ہے، ہمارے معاشرے میں فرسٹ انفارمیشن رپورٹ (ایف آئی آر)کٹتے ہی متعلقہ شخص کو گرفتار کرلیا جاتا ہے جبکہ دنیا بھر میں اصول ہے کہ جب تک جرم ثابت نہ ہو کسی کو گرفتار نہیں کیا جاتا۔انہوں نے کہا کہ عام ایف آئی آر سے نہ صرف متعلقہ شخص بلکہ اس کا پورا خاندان متاثر ہوتا ہے۔ان کا کہنا تھا کہ ہماری جیلوں میں بڑی تعداد انڈر ٹرائل قیدیوں کی ہے، جس سے نہ صرف جیلوں بلکہ عدالتوں پر بھی بوجھ بڑھتا ہے، اسی لیے حکومت سندھ نے اس ضمن میں پولیس رولز میں اصلاحات کا فیصلہ کیا ہے۔مرتضی وہاب نے کہا کہ اصلاحات کا فیصلہ اس لیے کیا گیا ہے تاکہ جیلوں میں انڈر ٹرائل قیدیوں کی تعداد کے ساتھ ساتھ عدالتوں پر بھی بوجھ کم کیا جا سکے۔ان کا کہنا تھا کہ ہماری کوشش ہوگی کہ صرف ایسے ملزمان کو گرفتار کیا جائے جو عادی مجرم ہوں اور اس حوالے سے ترامیم پر تفصیلی غور و خوض شروع کردیا گیا ہے اور جلد اس سلسلے میں مثر ترامیم کی جائیں گی، جس کے مثبت اثرات مرتب ہوں گے۔

 سندھ حکومت

مزید :

پشاورصفحہ آخر -