وزیر صحت کا پنجاب بھر میں غیر رجسٹرڈ بلڈ بنکس کیخلاف سخت کارروائی کا حکم

 وزیر صحت کا پنجاب بھر میں غیر رجسٹرڈ بلڈ بنکس کیخلاف سخت کارروائی کا حکم

  

لاہور(جنرل رپورٹر) صوبائی وزیر صحت ڈاکٹر یاسمین راشدکی زیر صدارت محکمہ سپیشلائزڈ ہیلتھ کئیراینڈ میڈیکل ایجوکیشن میں پنجاب بلڈ ٹرانسفیوژن اتھارٹی کا اجلاس منعقد ہوا۔ اجلاس کے دوران پنجاب بلڈ ٹرانسفیوژن اتھارٹی کی کارکردگی اور آئندہ لائحہ عمل کا جائزہ لیا۔ڈی جی ڈاکٹرشہناز نے پنجاب بلڈ ٹرانسفیوژن اتھارٹی کی کارکردگی کی تفصیلات پیش کیں۔صوبائی وزیر صحت ڈاکٹریاسمین راشدنے کہاکہ صوبہ بھر میں غیر رجسٹرڈ بلڈ بنکس کے خلاف سخت کارروائی عمل میں لائی جائے۔صوبہ بھرمیں غیررجسٹرڈ بلڈ بنکس کسی قیمت پر نہیں چلنے چاہئیں صوبائی وزیر صحت نے کہاکہ تمام سی ای اوزاور ٹیچنگ ہسپتالوں کے ایم ایس حضرات اپنے اضلاع کے بلڈ بنکس کا دورہ کرکے خو ن کی ترسیل اور صفائی ستھرائی کا جائزہ لیں۔ابھی تک 186سے بڑھ کر 289سرکاری وغیرسرکاری بلڈبنکس کو رجسٹرڈ کرلیاگیاہے۔صوبائی وزیر صحت نے مزیدکہاکہ تعینات کئے گئے نئے 45ڈسٹرکٹ بلڈ سیفٹی انسپکٹرزکوبلڈ بنکس کی باقاعدہ مانیٹرنگ کا حکم دیاگیاہے۔نئے تعینات ڈسٹرکٹ بلڈ سیفٹی انسپکٹرزکو باقاعدہ ماہرین سے محکمانہ تربیت دلوائی گئی ہے۔ دریں اثناء  ڈاکٹریاسمین راشدکی زیر صدارت محکمہ سپیشلائزڈ ہیلتھ کئیراینڈ میڈیکل ایجوکیشن میں مینٹل ہیلتھ اتھارٹی کا اہم اجلاس بھی منعقدہوا۔صوبائی وزیر صحت ڈاکٹریاسمین راشدنے اجلاس میں مینٹل ہیلتھ اتھارٹی پنجاب کے موجودہ قانون میں ترامیم کیلئے سفارشات کا جائزہ لیا۔جلاس میں مینٹل ہیلتھ اتھارٹی پنجاب میں ڈائریکٹر جنرل کی اسامی کی سفارش کی گئی ہے۔صوبائی وزیر صحت ڈاکٹریاسمین راشدنے کہاکہ مینٹل ہیلتھ اتھارٹی پنجاب کے موجودہ قانون میں ترامیم کیلئے تمام سفارشات کا بغورجائزہ لیاگیاہے اور نئی مینجمنٹ کمیٹی بنانے کی سفارش کی گئی۔

  وزیر صحت

مزید :

صفحہ آخر -