محکمہ اینٹی کرپشن میں احتساب کا عمل جاری ہے،جام اکرام 

  محکمہ اینٹی کرپشن میں احتساب کا عمل جاری ہے،جام اکرام 

  

کراچی (اسٹاف رپورٹر)صوبائی وزیر برائے صنعت و تجارت اور انسداد بدعنوانی و محکمہ امداد باہمی جام اکرام اللہ دھاریجو نے کہا ہے کہ محکمہ اینٹی کرپشن اسٹیبلشمنٹ سندھ میں اصلاحات کا عمل جاری ہے۔ اصلاحات کا مقصد کرپشن کے خلاف بھرپور کارروائی کرنا اور افسران کی جدید خطوط پر تربیت کرنا شامل ہے۔ یہ بات آج انہوں نے اپنے دفتر میں مختلف وفود اور میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہی۔ انہوں نے کہا کہ یہ ایک عمومی شکایت تھی کہ اینٹی کرپشن میں کیسز کو دیر سے نمٹایا جاتا ہے اس مسئلے کے حل کے لئے زیر التوا کیسز کو تین ماہ کے اندر مکمل کرنے کی ہدایات جاری کردیں ہیں۔ جام اکرام اللہ دھاریجو نے مذید کہا کہ کوئی بھی قانون سے بالاتر نہیں ہے۔ سرکاری محکموں میں موجود کالی بھیڑوں کے خلاف کارروائی جاری ہے جبکہ محکمہ اینٹی کرپشن اسٹیبلشمنٹ سندھ کے اندر بھی احتسابی عمل جاری رہتا ہے۔ صوبائی وزیر برائے صنعت و تجارت اور انسداد بدعنوانی و محکمہ امداد باہمی جام اکرام اللہ دھاریجو نے کہا کہ اگر کسی کو محکمہ اینٹی کرپشن کے کسی بھی افسر یا عملے کے خلاف شکایت ہے تو درج کروائے۔شکایت ملنے پر محکمے کے کئی افسران کے خلاف کارروائی کی گئی ہے۔ انہوں نے کہا کہ کئی افسران کو ان کے اصل محکموں میں واپس کردیا گیا ہے۔ پاکستان پیپلز پارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری کی کرپشن کے خلاف کارروائی کی ہدایات ہیں۔ جام اکرام اللہ دھاریجو نے کہا کہ کرپٹ عناصر کے خلاف حالیہ کاروائیاں یہ ثابت کرتی ہیں کہسرکاری محکموں کو کرپشن سے پاک کرنے کے لئے محکمہ اینٹی کرپشن موثر اقدامات کررہا ہے۔ انہوں نے کہا کہ شکایات سیل 1414 بھی فعال ہے۔ شکایت ملنے پر فوری کارروائی کرتے ہیں۔ عوام بلا خوف و خطر کرپٹ عناصر کی نشاہدہی کرے۔ کارروائی کریں گے۔ صوبائی وزیر برائے صنعت و تجارت اور انسداد بدعنوانی و محکمہ امداد باہمی جام اکرام اللہ دھاریجو نے کہا کہ حکومت سندھ عوام کے مسائل ہر سطح پر حل کررہی ہے اور صوبے سے بیروزگاری کے خاتمے کے لیے صوبے کے دیگر علاقوں میں بھی انڈسٹریل زونز قائم کررہی ہے۔

مزید :

صفحہ آخر -