او ایل ایکس کی ہزاروں چھوٹے کاروباروں کی معاونت 

  او ایل ایکس کی ہزاروں چھوٹے کاروباروں کی معاونت 

  

لاہور(پ ر)سال 2020 کا اختتام قریب آنے کے ساتھ ہی پاکستان کی نمبر ایک آن لائن مارکیٹ پلیس او ایل ایکس (OLX) نے رواں سال انتہائی مشکل وقت کے دوران پاکستان میں لاک ڈاؤن کے باعث او ایل ایکس جیسی آن لائن مارکیٹ پلیس پر چھوٹے کاروبار قائم کرنے اور آن لائن صارفین کی جانب سے مصنوعات اور خدمات کی فراہمی جاری سے متعلق تازہ ترین اعداد و شمار جاری کئے ہیں۔ کرونا کے باعث آن لائن صارفین نے خدمات اور اشیاء کے حصول میں مقبولیت حاصل کرلی۔ ملک میں لاک ڈاؤن اور ایس او پیز پر سختی سے نفاذ کے باعث سال 2020 کے دوران سروسز کٹیگری میں 99 فیصد اضافہ ہوا۔ اسکی ذیلی کٹیگریز موورز اینڈ پیکرز، ٹیکس سروسز، سیکورٹی، کار رینٹل، ویب ڈیولپمنٹ اور آن لائن ایجوکیشن اور کلاسز کی طلب میں انتہائی تیزی آئی جس کے نتیجے میں سروسز کٹیگری پر مجموعی طور پر اثر پڑا اور ہزاروں چھوٹے کاروباری افراد کو مشکل حالات میں اپنی آمدن برقرار رکھنے میں مدد ملی۔ یہ وہ وقت تھا جب لوگوں کو ملازمتوں سے نکالا جارہا تھا اور اس وقت لوگوں کے لئے باہر جاکر کام کرنا تقریبا ناممکن ہوگیا تھا۔ او ایل ایکس پاکستان کے سی ای او عمران علی خان نے کہا، "مجھے یہ کہتے ہوئے فخر محسوس ہورہا ہے کہ او ایل ایکس پاکستان نے سخت لاک ڈاؤن کے دوران ہزاروں چھوٹے کاروباری افراد کو مدد فراہم کی۔ سال 2020 کے دوران ہم نے زیادہ تیزی سے آن لائن خریداری کا مشاہدہ کیا۔ اس لئے ہم جو تبدیلیاں لائے اس کے بعد جیسے جیسے معیشت بحال ہوگی، ان تبدیلیوں کے طویل المیعاد اثرات مرتب ہوں گے۔

 سال 2021 کے دوران ہم پاکستان میں آن لائن خریداری کے رجحان کے پیش نظر عام صارفین اور چھوٹے کاروباری افراد کو مزید سہولت پیش کرنے کے لئے اپنی خدمات میں مزید بہتری لائیں گے۔" 

جیسا کہ لاک ڈاؤن کے دوران ملک بھر میں روایتی ریٹیل مارکیٹیں بند تھیں۔ اس لئے سال 2019 کے مقابلے میں 14 کٹیگریز میں سے 11 کٹیگریز میں 100 فیصد سے زیادہ اضافہ ہوا۔ ان میں پالتو جانور (205 فیصد)، موبائلز (187 فیصد)، بائک (160 فیصد)، فیشن و بیوٹی (157 فیصد)، الیکٹرانکس و ہوم ایپلائنسز (146 فیصد)، بزنس، انڈسٹریل اور ایگریکلچر (141 فیصد)، ویہکلز (136 فیصد)، جابز (135 فیصد)، بکس، اسپورٹس اور ہابیز (126 فیصد)، کڈز (117 فیصد)، فرنیچر و ہوم ڈیکور (100 فیصد) شامل ہیں۔ 

او ایل ایکس پر 2.2 کھرب روپے کا لین دین ہوا جس میں ویہکل کٹیگری کا سب سے بڑا حصہ 90ارب روپے رہا۔ او ایل ایکس پر اولین تین مقبول کار برانڈز میں سوزوکی، ٹویوٹا اور ہنڈا شامل رہے جن کی بالترتیب ڈھائی لاکھ، ایک لاکھ تیس ہزار اور 91 ہزار گاڑیاں فروخت ہوئیں۔ 

اسی طرح، رواں سال سب سے زیادہ فروخت ہونے والے تین اولین موبائل برانڈز میں سام سنگ، ایپل اور ہواوے شامل ہیں جن کے موبائلز کے فروخت کی تعداد بالترتیب 4 لاکھ 90 ہزار، 4 لاکھ 40 ہزار اور 2 لاکھ 14 ہزار رہی۔ 

مزید :

کامرس -