” اس شہر میں زیادتی تو سی ڈی اے 50 سال سے کر رہاہے “ چیف جسٹس اسلام آباد ہائیکورٹ نے کلاس لے لی 

” اس شہر میں زیادتی تو سی ڈی اے 50 سال سے کر رہاہے “ چیف جسٹس اسلام آباد ...
” اس شہر میں زیادتی تو سی ڈی اے 50 سال سے کر رہاہے “ چیف جسٹس اسلام آباد ہائیکورٹ نے کلاس لے لی 

  

اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن )اسلام آباد ہائیکورٹ نے بھیکہ سیداں میں سی ڈی اے آپریشن روکنے کا حکم جاری کرتے ہوئے کیس عدالت نمبر جار کو منتقل کر دیاہے ۔

تفصیلات کے مطابق اسلام آباد ہائیکورٹ کے چیف جسٹس نے بھیکہ سیداں میں سی ڈی اے آپریشن روکنے سے متعلق درخواست پر سماعت کی ، درخواست میں موقف اختیار کیا گیا تھا کہ سی ڈی اے نے معاوضہ دیا نہیں اور گھر گرانے کیلئے نوٹس دیدیا ۔ دوران سماعت سی ڈی اے نے دلائل دیتے ہوئے کہا کہ باﺅں بھیکہ سیداں میں متاثر نہیں ہیں بلکہ قابضین ہیں جو زیادتی کر رہے ہیں ، چیف جسٹس نے ریمارکس دیتے ہوئے کہا کہ اس شہر میں زیادتی تو سی ڈی اے 50 سال سے کر رہاہے ، سی ڈی اے نے زمین لے کر معاوضہ نہیں دیا تاکہ کرپشن کا دروازہ کھلا رہے۔ سی ڈی اے کے وکیل نے عدالت میں کہا کہ متاثرین کے کلیم بے بنیاد ہیں ، ثابت کریں گے ۔

عدالت نے متاثرین کی درخواست کو منظور کرتے ہوئے گاﺅں بھیکہ سیداں میں سی ڈی اے آپریشن روکنے کا حکم جاری کر دیاہے ۔چیف جسٹس نے بھیکہ سیداں کیس عدالت نمبر چار کو منتقل کر دیاہے ۔

مزید :

قومی -