اثاثوں کی تفصیلات جمع نہ کرانے والے سیاستدانوں کے نام سامنے آگئے

اثاثوں کی تفصیلات جمع نہ کرانے والے سیاستدانوں کے نام سامنے آگئے
اثاثوں کی تفصیلات جمع نہ کرانے والے سیاستدانوں کے نام سامنے آگئے

  

اسلام آباد (ویب ڈیسک) الیکشن کمیشن کا کہنا ہے کہ وزیر اعلیٰ پنجاب و سندھ سمیت حکومتی جماعت، اس کے اتحادیوں اور اپوزیشن جماعتوں کے بیشتر ارکان نے اپنے اثاثوں کی تفصیلات جمع نہیں کرائی ہیں۔

روزنامہ جنگ کے مطابق الیکشن کمیشن کی جانب سے جاری کردہ ناموں میں سینیٹ کے14 اراکین بھی شامل ہیں جنہوں نے اثاثوں کی تفصیلات جمع نہیں کرائی ہیں ، سینیٹ سے رضار بانی، مصدق ملک، عائشہ رضا فاروق ، سینیٹرمحمدعلی سیف، مرزا محمد آفریدی ، سینیٹر مصطفیٰ نواز کھوکھر، کامران مائیکل نےاثاثوں کی تفصیل جمع نہیں کرائی۔

الیکشن کمیشن کے مطابق اسد عمر، نور الحق قادری ،ایم این اےعلی نواز اعوان، عامر کیانی، علی زاہد، ایم این اے مہناز اکبر عزیز، چوہدری محمود بشیر ورک، خرم دستگیر، محسن رانجھا، علی گوہر خان، جنید انور چوہدری ، ایم این اے محمد ریاض، شیخ روحیل اصغر،قائد حزب اختلاف شہباز شریف ،وفاقی وزراءشفقت محمود، حماداظہرنےاثاثوں کی تفصیلات جمع نہیں کرائیں۔

الیکشن کمیشن آف پاکستان کے مطابق وزیر مملکت زرتاج گل، وفاقی وزیرڈاکٹر فہمیدہ مرزا ، سیدعلی زیدی،عامرلیاقت، ایم این اے رومینہ خورشید، کنول شوزب ، ایم این اےعالیہ حمزہ ملک،میلکہ بخاری،حناربانی کھر نے اپنے اثاثوں کی تفصیلات جمع نہیں کرائیں۔

وزیراعلیٰ سندھ مراد علی شاہ سمیت پاکستان پیپلز پارٹی سے تعلق رکھنے والے رکن سندھ اسمبلی قائم علی شاہ، خورشید شاہ، علی گوہر مہر ،شرجیل میمن، سعید غنی، ناز بلوچ، شہلا رضا، شرمیلا فاروقی نےاثاثوں کی تفصیلات نہیں دی ہیں۔

اس کے علاوہ نوید قمر، سید رفیع اللہ ، اخترمینگل،مائزہ حمید،شیزاخواجہ ، کیشومل کھیل داس، لال چند ، ایم این اے ڈاکٹر درشن اور جے پرکاش نے بھی اثاثوں کی تفصیلات جمع نہیں کرائیں۔

الیکشن کمیشن کاکہنا ہے کہ رکن کے پی اسمبلی شہرام ترکئی، نگہت اورکزئی ،رکن بلوچستان اسمبلی یار محمد رند نے بھی اثاثوں کی تفصیلات جمع نہیں کرائیں۔

وزیر اعلیٰ پنجاب عثمان بزدار سمیت ایم پی اے چوہدری نثار، صوبائی وزیر راجا بشارت ، حمزہ شہباز، سیف الملوک کھوکھر، حامد یار ہراج ، رکن پنجاب اسمبلی عظمٰی بخاری، اویس لغاری نے بھی اثاثوں کی تفصیلات نہیں دی ہیں۔

ایم کیو ایم پاکستان کے خالد مقبول صدیقی بھی اثاثوں کی تفصیلات جمع نہیں کرانے والوں کی فہرست میں شامل ہیں۔

الیکشن کمیشن آف پاکستان کا یہ بھی کہنا ہے کہ اراکین کے اثاثوں کی تفصیلات جمع کرانے کی مدت 31 دسمبر کو ختم ہو چکی ہے۔

دوسری جانب الیکشن کمیشن آف پاکستان کی جانب سے اثاثوں کی تفصیلات نہ دینے والے ارکان قومی، صوبائی اسمبلی اور سینیٹ کو مہلت دیتے ہوئے ہدایت کی گئی ہے کہ وہ 15 جنوری تک اپنے اثاثوں کی تفصیلات جمع کرا دیں۔

مزید :

علاقائی -اسلام آباد -