"پی ڈی ایم رہنماؤں کے چہروں سے لگ رہا تھا کوئی نتائج نہیں نکلے" شبلی فراز کا ردعمل

"پی ڈی ایم رہنماؤں کے چہروں سے لگ رہا تھا کوئی نتائج نہیں نکلے" شبلی فراز کا ...
سورس:   File

  

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن) وفاقی وزیر اطلاعات و نشریات شبلی فراز نے کہا ہے کہ پاکستان ڈیمو کریٹک موومنٹ ( پی ڈی ایم ) کے رہنماؤں کے چہروں سے لگ رہا تھا کہ آج کے اجلاس کے کوئی نتائج نہیں نکلے۔ 

وفاقی وزیراطلاعات شبلی فراز نے پی ڈی ایم رہنماؤں کی پریس کانفرنس پر ردعمل دیتے ہوئے کہا ہے کہ پاکستان پیپلزپارٹی کے پاس صوبائی  حکومت ہے وہ استعفے نہیں دینا چاہتی، آج کے اجلاس میں واضح ہو گیا ہے کہ پیپلزپارٹی کی جانب سے کوئی بھی جواب نہیں آیا اور یہ صرف اپنی خفت مٹانے کےلیے کھیل رچارہے ہیں۔ 

شبلی فراز نے کہا کہ مولانا فضل الرحمان کا سیاسی قد کاٹھ ختم ہو چکا ہے یہ اپنی کرپشن بچانے کےلیے اداروں کے خلاف ہرزہ سرائی کر رہے ہیں، اگر ان کی خواہش ہے کہ اداروں کو ڈرا دھمکا کر ریلیف لے لیں گے تو یہ ان کی بھول ہے، مولانا اپنا آخری پتا کھیل چکے ہیں اور اب جیل ہی ان کا مقدر ہوگی۔ 

واضح رہے دوسری جانب پی ڈی ایم رہنماوں کا جاتی امراء میں اجلاس ہوا جس میں ضمنی انتخابات میں حصہ لینے پر اتفاق کیا گیاجبکہ سینیٹ الیکشن کے حوالے سے فیصلہ بعد ہوگا۔ سربراہ پی ڈی ایم مولانا فضل الرحمان نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ اپوزیشن جماعتوں کے تمام استعفے پارٹی قیادت کے پاس پہنچ چکے ہیں۔ حکومت کے پاس 31جنوری تک کی مہلت ہے،اس کے بعد فیصلہ کریں گے کہ ہم نے لانگ مارچ اسلام آباد کی طرف کرنا ہے یا راولپنڈی کی طرف ۔

مزید :

قومی -