حکومت کو مولانا فضل الرحمان کی ایک ماہ کی مہلت ،ڈاکٹر شہباز گل نے ایسی بات کہہ دی کہ ساری اپوزیشن جماعتیں سوچ میں پڑ جائیں 

حکومت کو مولانا فضل الرحمان کی ایک ماہ کی مہلت ،ڈاکٹر شہباز گل نے ایسی بات ...
حکومت کو مولانا فضل الرحمان کی ایک ماہ کی مہلت ،ڈاکٹر شہباز گل نے ایسی بات کہہ دی کہ ساری اپوزیشن جماعتیں سوچ میں پڑ جائیں 

  

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)حکومت مخالف اتحاد پاکستان ڈیمو کریٹک موومنٹ(پی ڈی ایم )کی جانب سے حکومت کو ایک ماہ کی مہلت دینے اور ضمنی انتخابات میں حصہ لینے کے اعلان پر حکومتی موقف بھی سامنے آ گیا ،ڈاکٹر شہباز گل نے ایسی بات کہہ دی کہ پی ڈی ایم کی ساری قیادت سوچ میں پڑ جائے گی ۔

تفصیلات کے مطابق مولانا فضل الرحمان نے پی ڈی ایم کے سربراہی اجلاس کے بعد میڈیا سے کی جانے والی گفتگو میں حکومت کو مستعفی ہونے کے لئے ایک ماہ کی مہلت دی اور ضمنی انتخابات میں حصہ لینے کا اعلان کرتے ہوئے کہا کہ حکومت سے نجات کیلئے پی ڈی ایم پہلےسےزیادہ پرعزم ہے،عمران خان ایک مہرہ ہے، 19 جنوری کوالیکشن کمیشن کےدفتر کے باہر پی ڈی ایم کامظاہرہ ہوگا جبکہ نیب دفاترکےسامنے بھی مظاہرےکیےجائیں گے۔مولانا فضل الرحمان کی پریس کانفرنس پر ردِعمل دیتے ہوئے مائیکروبلاگنگ ویب سائٹ پر ڈاکٹر شہباز گل نے کہا کہ "فضل الرحمان کی پریس کانفرنس میں ایک کام کی بات سامنے نہیں آسکی، پی پی کی طرف سے سرخ جھنڈی دکھائی جانے کے بعد مریم اور فضل الرحمان کو سمجھ نہیں آ رہی کہ وہ عوام کو مزید کیسے بے وقوف بنائیں؟اب یہ ضمنی الیکشن میں حصہ لیں گے تو مسلہ حل ہو گیا، آپ استعفے دیں ہم ضمنی الیکشن کروا دیتے ہیں ۔

دوسری طرف وفاقی وزیر اطلاعات سینیٹر شبلی فراز نے کہا کہ اپوزیشن کا بیانیہ دفن ہوچکا ہے، پی ڈی ایم رہنماؤں کےچہروں سے لگ رہا تھا کوئی نتائج نہیں نکلے ، پیپلز پارٹی کے پاس حکومت ہے، وہ استعفے دینا نہیں چاہتے،پیپلز پارٹی کے پاس سے کوئی جواب نہیں آیا۔انہوں نےکہا کہ مولانا فضل الرحمان کا نیب آفس کے گھیراؤ کا اعلان اداروں کو دھمکانے کی کوشش ہے،آپ احتساب کے اداروں کا گھیراؤ کریں گے،مریم نواز کی پیشی پر مسلم لیگ نے بھی پر حملہ کیا تھا۔

مزید :

قومی -