موسم سرما میں گلاب،میری گولڈ،گینداکاشت کرنے کی ہدایت

  موسم سرما میں گلاب،میری گولڈ،گینداکاشت کرنے کی ہدایت

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app


فیصل آباد (اے پی پی)انسٹیٹیوٹ آف ہارٹیکلچر سائنسز زرعی یونیورسٹی فیصل آباد نے پھولوں کے کاشتکاروں و باغبانوں کو موسم سرما میں زیادہ سے زیادہ رقبہ پر گلاب،گلائل،گلیڈی اولس،گل للی،گل دادی،سٹیٹس،گیندا، سٹاک، لیلیم،میر ی گولڈ کاشت کرنے کی ہدایت کرتے ہوئے  کہا  ہے کہ موسم سرما کے دوران موسم گرما کی نسبت موسم معتدل اور خوشگوار ہوتا ہے لہذا  اس میں تراشیدہ و آرائشی پھولوں کی مانگ میں زبر دست اضافہ ہو جاتا ہے لہذ ا کاشتکار و باغبان مذکورہ اقسام کے خوبصورت و رنگ برنگ اور دلکش پھول کاشت کر کے بھاری منافع کما سکتے ہیں۔انسٹیٹیوٹ آف ہارٹیکلچر سائنسز زرعی یونیورسٹی فیصل آباد کے ترجمان کے مطابق پنجاب کے موسمی حالات کے باعث موسم سرما کے دوران زیادہ رقبہ پر پھول کاشت کئے جاتے ہیں جبکہ پھولوں کی بڑی منڈیاں سگیاں لاہور،پتو کی،لہلن ہٹار،ٹبہ سلطان پور،گوجرانوالہ اور راولپنڈی میں ہیں جہاں سے پاکستان کے تمام چھوٹے و بڑے شہروں کو پھولوں کی ترسیل کی جاتی ہے لیکن پنجاب کے تقریبا تمام اضلاع پھولوں کی کاشت کیلئے موزوں ہیں۔انہوں نے کہاکہ پاکستان میں زیادہ تر گلاب کی مختلف اقسام ہی کاشت کی جاتی ہیں لیکن گرو جن، ہائبرڈ گلاب کی قسم کارڈینل اور سینٹی فولیا کو ہی زیادہ رقبہ پر کاشت کیا جاتا ہے جن کی سالانہ پیداوار 250سے 270من فی ایکڑ تک ہے۔

مزید :

کامرس -