کئی نشیب و فراز کیساتھ 2022ء رخصت،2023ء نئی امیدوں کیساتھ طلوع

  کئی نشیب و فراز کیساتھ 2022ء رخصت،2023ء نئی امیدوں کیساتھ طلوع

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app


        اسلام آباد(آن لائن)کئی نشیب وفراز کے بعد سال2022 پاکستان کے حوالے سے بہت سی تلخ یادوں کیساتھ رخصت ہوگیا جبکہ آج اتوار کو سال نو 2023 کا سورج کئی امیدوں کیساتھ طلوع ہوگیاہے،پاکستان کے حوالے سے سال 2022 بہت سی تلخ یادیں چھوڑ گیا،اپریل 2022 میں تحریک انصاف کی حکومت ساڑھے تین سال بعد ختم ہوگئی اور تحریک عدم اعتماد کے ذریعے ہٹائے جانیوالے عمران خان پاکستان کے پہلے وزیر اعظم بن گئے،تاہم انہوں نے اپنی حکومت کو ہٹانے کے پیچھے اسٹیبلشمنٹ اور امریکی سازش کو قرار دیا لیکن ان کا بیانیہ مسلسل بدلتا رہا،عمران خان کے ہٹنے کے بعد 13 جماعتی اتحاد پی ڈی ایم نے حکومت بنائی جسے ورثے میں کئی مسائل ملے،چیلنجوں کا سامنا کرنا پڑا جس میں سب سے بڑا چیلنج معاشی بحالی اور عوام کو ریلیف دینا تھا،تمام تر کوششوں کے باوجود حکومت اس میں کامیاب نہ ہوئی، مہنگائی کی شرح 30 فیصد تک جا پہنچی،سال2022 عوام کیلئے اور بھی مشکل تر ہوا جب موسمیاتی تبدیلیوں کی وجہ سے پاکستان میں تباہ کن سیلاب آیا اور اس نے ملک کے 70 فیصد حصے کو بری طرح متاثر کیا،بلوچستان اور سندھ مکمل ڈوب گئے اور متا ثر ہ افراد کی بحالی آج بھی بہت بڑا چیلنج ہے،متاثرین کی بحالی کیلئے عالمی برادری سے امداد کی اپیلیں کی گئیں لیکن ان اپیلوں پرانتہائی قلیل امداد پاکستان کو ملی۔2022 میں ایک اور بڑی تبدیلی آرمی چیف کی صورت میں سامنے آئی،پہلی بار آرمی چیف کی تقرری ایک تنازع کی شکل اختیار کر گئی اور سیاستدانوں نے اسے اپنی سیاست کیلئے استعمال کیا تاہم وزیر اعظم شہباز شریف نے ایک بڑا فیصلہ لیتے ہوئے دباؤ مسترد کیا اور سب سے سینئر جرنیلوں میں سے جنرل ساحر شمشاد مرزا کو چیئرمین جوائنٹ چیفس آف سٹاف کمیٹی اور جنرل سید عاصم منیر کو چیف آف آرمی سٹاف مقرر کیا۔یہ بھی پاکستانی تاریخ میں پہلی بار ہوا کہ فوجی قیادت اور اسٹیبلشمنٹ پر الزامات اور مسلسل تنقید کا جواب دینے کیلئے ڈی جی آئی ایس آئی کو بریفنگ کیلئے میڈیا کے سامنے آنا پڑا۔ 2022 کے حوالے سے اسٹیبلشمنٹ اور عسکری قیادت نے غیر سیاسی رہنے سے متعلق اپنے فیصلے پر ثابت قدمی دکھائی اور اسی وجہ سے عمران خان عوامی مقبولیت کی بناء پر قومی اسمبلی کے 8 حلقوں میں الیکشن جیت گئے، 2022 میں ہی عمران خان کو فارن فنڈنگ کیس میں نا اہل قرار دیا گیا،توشہ خانہ ریفرنس بھی بنایا گیا جس کا فیصلہ ابھی آنا باقی ہے۔ 2022 میں عمران خان اور ان کی اہلیہ بشیری بی بی کے آڈیوز ویڈیوز سکینڈل سامنے آتے رہے جبکہ دہشت گردی نے ایک مرتبہ پھر سر اٹھانا شروع کیا اور خیبر پختونخوا و بلوچستان میں تسلسل کیساتھ دہشت گردی کے واقعات رونما شروع ہوگئے۔نواز شریف سال2022میں بھی واپس نہ آئے اور اس حوالے سے مسلسل تاریخیں دیتے رہے۔سپریم کورٹ کے سینئر جج جسٹس قاضی فائز عیسی کے حوالے سے صدارتی ریفرنس مسترد کیا گیا جبکہ سپریم کورٹ نے ریکوڈک منصوبے کے حوالے سے وفاقی حکومت کے بھیجے گئے ریفرنس کو درست قرار دیکر پاکستان میں غیر ملکی سرمایہ کاری کی راہ ہموار کی اور بھاری جرمانے سے بھی بچا لیا۔وفاقی دارالحکومت میں 31 دسمبر کو بلدیاتی انتخابات کرا نے کا فیصلہ ہوا تاہم وفاقی حکومت نے یونین کونسل کی تعداد 101 سے بڑھا کر125 کر دی اس کیلئے قانون میں ترمیم کی مگر صدر نے قانون کی توثیق نہ کی،معاملہ عدالت میں گیا تو عدالت نے 31 دسمبر کو ہی الیکشن کرانے کا حکم دیا مگر وفاقی حکومت نے الیکشن کرانے سے انکار کرتے ہوئے انٹراکورٹ اپیل دائر کر دی۔
سال 2022

اسلام آباد،لاہور،کراچی، پشاور، کوئٹہ (سٹاف رپورٹر، کرائم رپورٹر، مانیٹرنگ ڈیسک)نئے سال 2023 کا آغاز ہوگیا،12 بجتے ہی سال نو کے آغاز کیساتھ ملک بھر میں آتش بازی اور جشن کا سلسلہ شروع ہوگیا۔ کراچی میں سال 2023 کا آغاز ہوائی فائرنگ، دھماکوں اور پٹاخوں کیساتھ ساتھ ہلے گلے کیساتھ ہوا۔کراچی میں ساحل سمندر، نمائش چورنگی اور نجی ہاؤسنگ سوسائٹی سمیت دیگر مقامات پر نوجوانوں نے آتش بازی کی اورجشن منایا۔سال نو کے مو قع پر عوام کی بڑی تعداد فائیو اسٹار چورنگی پر جمع ہوئی اور نئے سال کو خوش آمدید کہا۔ اس کے علاوہ اسلام آباد، لاہور، گوجرانوالا سمیت دیگر شہروں میں منچلے سڑکوں پر نکل آئے۔نئے سال کے آغاز پر 12بجتے ہی لاہور سمیت مختلف شہروں میں منچلوں کی ہلڑبازی، آتش بازی، ون ویلنگ، ہوائی فائرنگ، سڑکوں پر ٹریفک جام ہوگیا۔ پولیس کے انتظامات دھرے رہ گئے۔ لاہور کے مختلف علاقوں مون مارکیٹ،گلشن راوی،بحر یہ ٹاؤن،آ زادی پل مینا ر پا کستا ن،ما ل روڈ،لبر ٹی،ڈیفنس،جو ہر ٹا ؤ ن،اقبا ل ٹا ؤ ن،کر یم بلا ک،کینا ل روڈ،و اپڈ ا ٹا ؤ ن،ویلنشیا ٹا ؤ ن،ڈی ایچ اے رہبر،بحر یہ آ ر چر ڈ،سمن آ با د، رائیو نڈ روڈ،با بو صا بو،نیو انا ر کلی اور اند رون شہر سمیت مختلف علاقوں میں ہو ٹلو ں،ریسٹ ہا ؤ سز،فا ر م ہا ؤ سز میں ہلہ گلا کیا، سال 2023 کو خوش آمدید کہا۔سال نو کے جشن کی سب سے بڑی  تقر یب بحریہ ٹاؤن کراچی 2 میں ہوئی جہاں شاندار آتش بازی کی گئی اور میوزیکل کنسرٹ منعقد کیا گیا، جس میں نامور گلوکار عاطف اسلم نے اپنے فن کا مظاہرہ کیا۔ جشن میں شہریوں کی بڑی تعداد نے شرکت کی۔علاوہ ازیں بحریہ ٹاؤن راولپنڈی اور لاہور ایفل ٹاور میں بھی شاندار تقریب کا مظاہرہ کیا گیا جہاں شاندار آتش بازی کا مظاہرہ کیا گیا، جس کے باعث آسمان رنگ و نور کی روشنی سے جگمگا اٹھا۔اسی طرح ملک کے بڑے شہروں میں بھی سال نو کی آمد کے حوالے سے تقاریب کا انعقاد کیا گیا۔ نئے سال پر منچلوں نے بائیکس ریلیاں نکالیں، ون ویلنگ کی، سائلنسر نکال کر بائیکس دوڑائیں جس پر پولیس نے گرفتاریاں بھی کیں۔کراچی میں ہزاروں نوجوان سی ویو پہنچے۔ رواں سال سندھ حکومت نے سی ویو کی سڑکیں بند نہ کرنے کا اعلان کیا تھا جبکہ وزیر اعلیٰ نے ڈبل سواری پر عائد پابندی کو ختم کردیا تھا۔
سال نوجشن

مزید :

صفحہ اول -