دریائی کٹاؤ‘ محکمہ آبپاشی کو رپورٹ پیش کرنیکا حکم 

دریائی کٹاؤ‘ محکمہ آبپاشی کو رپورٹ پیش کرنیکا حکم 

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app


ملتان (سپیشل رپورٹر)صوبائی وزیر پارلیمانی امور، تحفظ ماحول و کوآپریٹوز(بقیہ نمبر26صفحہ6پر)
 محمد بشارت راجہ کی زیر صدارت وزارتی ڈیزاسٹر مینجمنٹ کمیٹی کا اجلاس سول سیکرٹریٹ میں ہوا۔ صوبائی وزیر خزانہ محسن خان لغاری اور وزیر مال نوابزادہ منصور احمد خان نے بھی شرکت کی۔ اجلاس میں پنجاب کے مختلف علاقوں میں دریائی کٹاؤ روکنے کے منصوبوں پر غور کیا گیا۔ ڈائریکٹر جنرل پی ڈی ایم اے نے 7 اضلاع میں دریاؤں کا کٹاؤ روکنے کی 9 سکیموں پر بریفنگ دی۔ وزارتی کمیٹی نے ہدایت کی کہ دریائی کٹاؤ روکنے کی سکیموں پر محکمہ آبپاشی مفصل سروے کر کے رپورٹ پیش کرے۔ اجلاس کو بتایا گیا کہ جھنگ، ساہیوال، سرگودھا، گجرات، حافظ آباد اور میانوالی میں 953 ملین روپے کی لاگت سے 9 سکیموں کا تخمینہ لگایا گیا ہے۔ چیئرمین کمیٹی محمد بشارت راجہ نے ہدایت کی کہ بند بناتے ہوئے دریاؤں کی قدرتی گزرگاہوں میں رکاوٹیں ڈالنے سے گریز کیا جائے اور پی ڈی ایم اے یہ بھی تخمینہ لگائے کہ حکومتی سکیموں سے کتنی آبادی مستفید ہوگی۔ راجہ بشارت نے ایک ہفتے کے اندر نظرثانی شدہ تفصیل دوبارہ پیش کرنے کی بھی ہدایت کی۔ اس موقع پر وزیر مال نوابزادہ منصور احمد خان نے کہا کہ دسمبر تا مارچ کا وقت فلڈ سکیموں پر کام کرنے کا آئیڈیل وقت ہوتا ہے۔ زیادہ بہتر ہے کہ متعلقہ محکمے انہی مہینوں میں فلڈ سکیموں پر کام آگے بڑھایا کریں تاکہ پانی کی آمد بڑھنے سے قبل اقدامات مکمل کئے جاسکیں۔ اجلاس کے دوران وزیر خزانہ محسن لغاری نے اس عزم کا اظہار کیا کہ پنجاب حکومت فلڈ سکیموں کیلئے درکار فنڈز کی فراہمی یقینی بنائے گی تاکہ سیلاب کی تباہ کاریوں سے بچا جاسکے۔