غدار ی کے جرم میں متحدہ قومی موومنٹ پرپابندی لگنی چاہئے، فرخ حبیب

غدار ی کے جرم میں متحدہ قومی موومنٹ پرپابندی لگنی چاہئے، فرخ حبیب

لاہور(انٹرویو:شہباز اکمل جندران،محمد نواز سنگرا) غدار ی کے جرم میں متحدہ قومی موومنٹ پرپابندی لگنی چاہئے ۔پنجاب میں سستے رمضان بازار حکمرانوں کی تشہیری مہم بن کر رہ گئے ہیں ۔نندی پور پاور پراجیکٹ سفید ہاتھی بن چکا ہے،خواجہ آصف اور عابد شیر علی بجلی کی پیداوار بڑھانے کی بجائے بارش کا انتظار کرتے ہیں۔پنجاب میں بلدیاتی الیکشن شفاف ہوئے تو کامیابی تحریک انصاف کی ہو گی۔ان خیالات کا اظہار تحریک انصاف کے مرکزی ڈپٹی سیکرٹری اطلاعات فرخ حبیب نے روز نامہ پاکستان سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔فرخ حبیب کا کہنا ہے کہ پی ٹی آئی کو جوڈیشل کمیشن پر مکمل اعتماد ہے جبکہ شاہ محمود قریشی عمران خان کے متبادل نہیں بن رہے۔انہوں نے کہا کہ پاکستان میں انتخابی دھاندلی کا ایشو بہت بڑا ہے کیو نکہ تمام سیاسی جماعتوں نے تحفظات کا اظہار کیا ہے ،پاکستان کی تاریخ میں 1971کے علاوہ کوئی الیکشن شفاف نہیں ہوا۔جوڈیشل کمیشن میں دھاندلی کے بے شمار کردار بے نقاب ہو گئے جس میں نجم سیٹھی کا وہ بیان بھی شامل ہے جس میں کہا گیا کہ سرکاری مشینری نگران وزیر اعلیٰ کو نہیں بلکہ شریف برادران کو رپورٹ کرتی تھی،تحریک انصاف کو جوڈیشل کمیشن پر مکمل عتماد ہے اور اس کے فیصلے کو من وعن تسلیم کرے گی۔الیکشن 2013میں بہت سارے کرداروں نے مل کر دھاندلی کی،تحریک انصاف کے مرکزی ڈپٹی سیکرٹری اطلاعات نے کہا کہ کراچی میں ہیٹ سٹروک کی وجہ سے اموات کی ذمہ دار وفاقی حکومت ہے جبکہ خواجہ آصف اور عابد شیر علی بجلی کی پیداوار بڑھانے کی بجائے بار ش کا انتظار کرتے ہیں ۔انہوں نے کہا کہ نندی پور پاور پراجیکٹ سفید ہاتھی بن چکا جس کی لاگت 40ارب سے 120ارب تک پہنچ چکی ہے۔شہباز شریف نے پنجاب کو پولیس سٹیٹ بنا دیا ہے ،رمضان بازار تشہیری مہم بن کر رہ گئے ہیں ،پنجاب حکومت کاہیلی کاپٹر ٹیکسی کی طرح استعمال ہو رہا ہے ،ان کا کہنا تھا کہ سستے رمضان بازاروں میں مہنگی اور ناقص اشیاء فروخت ہور ہی ہیں۔فرخ حبیب نے کہا کہ ایم کیو ایم ایک دہشتگرداور غدار جماعت ہے جس پر پابندی لگنی چاہیے تحریک انصاف نے سب سے پہلے اس کیخلاف آواز اٹھائی جبکہ سپریم کورٹ کا آرڈر بھی موجود ہے جس میں سیاسی جماعتوں کا کراچی میں ٹارگٹ کلنگ میں ملوث ہونے کاذکر ہے۔طاہرالقادری کی پاکستان میں آمد کے حوالے سے سوال کے جواب میں فرخ حبیب نے کہا کہ تحریک انصاف اور پاکستان عوامی تحریک کے دھرنے کا مقصد الگ الگ تھا مگرنیک مقصد کیلئے مل کر چلنے میں حرج نہیں ۔انہوں نے کہا کہ پی ٹی آئی کی بڑھتی مقبولیت کیوجہ سے لوگ دھڑا دھڑ پی ٹی آئی میں شامل ہو رہے ہیں ، جہاں امیدوار کمزور یا نہیں ہے وہاں پر پیپلز پارٹی اور دوسری جماعتوں کے لوگ لے رہی ہے لیکن ٹکٹ میرٹ پر دیئے جاتے ہیں۔سیاسی جماعتوں میں دھڑے بندیاں ہوتی ہیں لیکن پی ٹی آئی عمران خان کے پیچھے متفق ہے۔ شاہ محمود قریشی عمران خان کے متبادل نہیں بن رہے۔خیبر پختونخواہ میں بلدیاتی الیکشن میں بدنظمیوں کی ذمہ دار حکومت نہیں الیکشن کمیشن یا انتظامیہ ہے۔عمران خان نے دوبارہ الیکشن کرانے کا کہ کر تاریخ رقم کر دی ہے۔ تحریک انصاف ایک قومی اور عوام کی صحیح معنوں میں نمائندہ جماعت ہے۔

مزید : صفحہ آخر