پٹھان کالونی آپریشن ، تین دہشتگردوانا سے آئے ،بھارتی کمانڈر نے افغانستان میں تربیت دی، آئی بی ہیڈکوارٹرہدف تھا: وزیرداخلہ پنجاب

پٹھان کالونی آپریشن ، تین دہشتگردوانا سے آئے ،بھارتی کمانڈر نے افغانستان ...
پٹھان کالونی آپریشن ، تین دہشتگردوانا سے آئے ،بھارتی کمانڈر نے افغانستان میں تربیت دی، آئی بی ہیڈکوارٹرہدف تھا: وزیرداخلہ پنجاب

  

لاہور(مانیٹرنگ ڈیسک) صوبائی وزیرداخلہ شجاع خانزادہ نے لاہور کے نواحی علاقے میں حساس اداروں کے آپریشن کی تفصیلات میڈیا کے سامنے پیش کردیں اور انکشاف کیاکہ تین دہشتگرافغانستان سے براستہ د وانا بس کے ذریعے لاہور پہنچے اور وہ مال روڈ پرواقع انٹیلی بیوروکے ہیڈکوارٹر کو نشانہ بناناچاہتے تھے تاہم اس سے پہلے ہی انٹیلی جنس اداروں کی نگرانی میں آگئے ، اس ساری کارروائی کا سربراہ بھارتی شہری اور افغانستان میں موجود مولانا آصف عمر تھا۔

پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے شجاع خانزادہ کاکہناتھاکہ ضرب عضب میں بڑی کامیابیاں مل رہی ہیں ، پٹھان کالونی میں کامیاب آپریشن پر انٹیلی جنس اور قانون نافذ کرنیوالے اداروں کو مبارکباد پیش کرتے ہیں ، ایک ہفتہ قبل الرٹ آیا جس کے بعد متعلقہ علاقوں میں رائیکی شروع کردی گئی ، ملزموں نے دودن اور دو راتیں تبلیغی جماعت کے اجتماع میں گزاریں ، فیصل آباد سے تعلق رکھنے والے دہشتگرد فیصل مبشر نے گھر کرائے پر لیا اور انٹیلی جنس اداروں کی نگرانی میں آگیا۔ اُنہوں نے بتایاکہ حساس اداروں نے رات کی تاریکی میں مکان پر چھاپہ مارا جس دوران اندر سے ہونیوالی فائرنگ کے نتیجے میں ایک اہلکار زخمی ہوگیا، جوابی کارروائی میں گھر کے اندر موجود تین دہشتگرد مارے گئے جبکہ دوکوزخمی حالت میں پکڑلیاگیا، ایک دہشتگردقانون نافذ کرنیوالے ادروں کے ہتھے چڑھا جبکہ ایک نے خود کو اڑالیا، دہشتگردوں سے 25منٹ تک فائرنگ کا تبادلہ جاری رہا۔

وزیرداخلہ نے بتایاکہ نعمان اورثاقب کو زخمی حالت میں پکڑاگیا، نعمان کا تعلق ٹانک سے ہے جبکہ پلاننگ کرنیوالا القاعدہ برصغیر کا بھارتی شہری مولاناآصف عمر تھا جو اس وقت افغانستان میں موجود ہے ، مرنیوالوں میں اس ٹیم کا کمانڈر ابدالی ، فیصل مبشر اور ثاقب حسین شامل ہیں ، لیپ ٹاپ سے ملنے والی ویڈیوز میں دیکھا جاسکتاہے کہ ابدالی گروپ کو بریفنگ دے رہاہے اوران کا ہدف مال روڈ لاہور پر واقع آئی بی آفس تھا۔

اُنہوں نے انکشاف کیاکہ صحیح سلامت پکڑے گئے محمود عر ف عبداللہ نے دوران تفتیش انکشاف کیاکہ وہ کراچی لانڈھی کارہائشی ہے اور پانچ ماہ افغانستان میں تربیت دی گئی جس کے بعد وہ بذریعہ بس وانا سے لاہور پہنچے ۔ وزیرداخلہ نے آئی ایس آئی اور دیگر متعلقہ اداروں کا پنجاب کی عوام سے طرف سے شکریہ اداکرتے ہوئے کہاکہ دیگر لوگ بھی ان شدت پسندوں سے سبق سیکھیں اور سیدھے راستے پر آجائیں ورنہ وہ بھی مارے جائیں گے ۔

مزید :

قومی -اہم خبریں -