جوہانسبرگ، بلدیاتی الیکشن میں ریکارڈ 200پارٹیوں نے 61014امیدوار میدان میں اتار دیئے

جوہانسبرگ، بلدیاتی الیکشن میں ریکارڈ 200پارٹیوں نے 61014امیدوار میدان میں اتار ...

جوہانسبرگ(رپورٹ،ندیم شبیر سے)جنوبی افریقہ میں 3اگست سے ہونے والے بلدیاتی انتخابات میں ریکارڈ پارٹیاں حصہ لے رہی ہیں۔200پارٹیاں الیکشن میں سامنے آئی ہیں جو کہ پچھلے الیکشن2011 سے 65فیصد زیادہ ہیں،61014امیدوار میدان میں ہیں جو کہ12فیصد زیادہ ہیں،جنوبی افریقہ کے چیف الیکش کمشنر نے صحافیوں کو بریفنگ دیتے ہوئے کہا کہ امید واروں کی حتمی لسٹ تیار کر لی گئی ہے،انہوں نے کہا8350امیدواروں کو الیکشن کے لئے نا اہل قرار دیا گیا ہے۔ان میں بہت سے ایسے لوگ تھے جن کی کاغذات نامکمل تھے اور زیادہ تر نے پیمنٹ نہیں کی ہوئی تھی،اور15فیصد ایسے لوگ تھے جو جس وارڈ سے الیکشن میں حصہ لے رہے تھے ان کا اس وارڈ میں ووٹ ہی نہیں تھا۔چیف الیکشن کمشنر موپیا نے مزید کہا کہ’’ نیشنل فریڈم پارٹی‘‘ کا معاملہ ابھی کورٹ میں ہے،کیونکہ اس پارٹی نے ڈیپازٹ وقت پر نہیں بھرے تھے،73ڈیپازٹ کے ریفرنسز غلط تھے،لیکن ان میں سے جو کلئیر ہو گئے ہیں ان کو الیکشن میں حصہ لینے کی اجازت دے دی گئی ہے،4649بیلٹ پیپر مختلف ہے جو متناسب نمائندگی کی بنیاد پر حصہ لینے والے امیدواروں کے لئے ہوں گے،میٹرو کونسل اور ڈسٹرکٹ کونسل کی سطح پر ہوں گے،الیکشن کمیشن نے ٹوٹل80ملین بیلٹ پیپر چھپوائے ہیں،الیکش میں حصہ لینے والوں میں40فیصد امیدوار مرد ہیں،48فیصد خواتین ہیں،831آزاد امیدوار ہیں جن میں سے14فیصد خواتین ہیں،کم سے کم 18سال کی عمر کا ایک نوجوان بھی الیکشن میں حصہ لے رہا ہے اور زیادہ سے زیادہ90سال کے ایک بزرگ میدان میں ہیں۔

مزید : عالمی منظر