ریپ کے ملزم نابینا شخص نے عدالت میں آتے ہی ایسی حرکت کردی کہ کمرے میں موجود ہر شخص کا چہرہ شرم سے لال ہوگیا

ریپ کے ملزم نابینا شخص نے عدالت میں آتے ہی ایسی حرکت کردی کہ کمرے میں موجود ہر ...
ریپ کے ملزم نابینا شخص نے عدالت میں آتے ہی ایسی حرکت کردی کہ کمرے میں موجود ہر شخص کا چہرہ شرم سے لال ہوگیا

  

ہرارے(مانیٹرنگ ڈیسک) زمبابوے میں ایک نابینا شخص نے 3سالہ بچی کو زیادتی کا نشانہ بناڈالا۔ ملزم کو گرفتار کرکے جب عدالت میں پیش کیا گیا تو اس نے کمرہ¿ عدالت میں ایسی حرکت کر دی کہ وہاں موجود ہر شخص شرم سے پانی پانی ہو گیا۔ ویب سائٹ worldwideweirdnews کی رپورٹ کے مطابق زمبابوے کے شہر لوپانڈا کے76سالہ نڈوانا فنیاس نے عدالت میں اپنے کپڑے اتار دیئے اور برہنہ ہو گیا۔ بتایا گیا ہے کہ متاثرہ بچی نڈاوا کے گھر کے پچھواڑے میں کھیل رہی تھی۔ وہ اسے ورغلا کر اپنے اپارٹمنٹ میں لے گیا اور زیادہ کا نشانہ بنا ڈالا۔

اس آدمی کو خاتون کے جسم کے اُس حصے کو ہاتھ لگانے پر گرفتار کرلیاگیا کہ اگر کوئی آپ کو لگائے تو آپ کو خوشی ہو

رپورٹ کے مطابق بچی کے رونے کی آواز سن کر اس کا ایک رشتہ دار اندر آیا اور اس نابینا شخص کو اس گھناﺅنے کام میں مصروف پایا۔ اس شخص نے فوری طور پر پولیس کو بلا لیا جو نڈاوا کو گرفتار کر کے لے گئی۔ عدالت میں گزشتہ روز جب سماعت شروع ہوئی تو نڈاوا وہیں بے لباس ہو گیا۔ اس پر جج نے افسران کو اسے فوری طور پر عدالت سے باہر لیجانے کا حکم دے دیا۔ جج نے بعدازاں اس کی ذہنی حالت چیک کروانے کا حکم دیا اور عدالتی کارروائی چیک اپ کی رپورٹ آنے کے بعد تک کے لیے ملتوی کر دی۔

مزید : ڈیلی بائیٹس