جمہوری دور میں جمشید دستی پر جیل میں تشدد آمرانہ عمل ہے،صاحبزادہ حامد رضا

جمہوری دور میں جمشید دستی پر جیل میں تشدد آمرانہ عمل ہے،صاحبزادہ حامد رضا

  



لاہور(ایجوکیشن رپورٹر)سنی اتحاد کونسل پاکستان کے چیئرمین صاحبزادہ حامد رضا نے کہا ہے کہ جمہوری دور میں جمشید دستی پر جیل میں تشدد آمرانہ عمل ہے۔ حکومت سیاسی مخالفین کو دبانے اور ڈرانے کے لیئے اوچھے ہتھکنڈوں پر اتر آئی ہے۔ جمشید دستی کو حکمرانوں کے خلاف بولنے کی سزا دی جا رہی ہے۔ ریمنڈ ڈیوس کے تازہ انکشافات سے ثابت ہو گیا ہے کہ دو پاکستانیوں کے قاتل امریکی جاسوس کی رہائی میں نواز شریف ملوث تھا۔ قومی غیرت کا سودا کرنے والے حکمران قوم پر حکمرانی کے اہل نہیں۔سانحہ پارا چنار پر مجلس وحدت المسلمین کے احتجاج کی حمایت کرتے ہیں۔ پارا چنار مسلسل دہشت گردی کا نشانہ بنا ہوا ہے۔ فرقہ پرست دہشت گردوں کے حامی حکومت میں موجود ہیں۔

گرینڈ الائنس کے قیام کے لیے جلد اپوزیشن جماعتوں کا اجلاس بلایا جائے گا۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے جامعہ رضویہ میں عید مِلن پارٹی سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ صاحبزادہ حامد رضا نے مزید کہا کہ ن لیگ کا خصوصی سیل فوج کی کردار کشی میں مصروف ہے۔ پاک فوج کو بدنام کرنے والے بھارتی ایجنڈے پر کام کر رہے ہیں۔ پاکستان کی بہادر افواج نے دہشت گردی کے خاتمے کے لیے بے مثال قربانیاں دی ہیں۔ فوج کی قربانیوں کی وجہ سے فاٹا، بلوچستان اور کراچی میں حکومتی رٹ قائم ہوئی ہے۔ ن لیگ پاک فوج کے خلاف سازشوں سے باز آ جائے۔ پوری قوم اپنی مسلح افواج کی پشت پر کھڑی ہے۔ چیئرمین سنی اتحاد کونسل کا مزید کہنا تھا کہ عالمی قوتیں پاکستان میں شام اور عراق جیسے حالات پیدا کرنا چاہتی ہیں۔ پاکستان میں فرقہ واریت کی آگ بھڑکانے کی سازش کی جا رہی ہے لیکن محب وطن پاکستانی فرقہ وارانہ قتل و غارت کی عالمی سازش کامیاب نہیں ہونے دیں گے۔ تمام مکاتب فکر کے علماء فرقہ وارانہ ہم آہنگی کے لیئے اپنا کردار ادا کریں۔ صاحبزادہ حامد رضا نے کہا کہ حکمران خاندان کے پاس جعلی قطری خط کے سوا اپنے دفاع میں کوئی دلیل نہیں۔ وزیر اعظم کی نا اہلی کا دن بہت قریب آ گیا ہے۔ نواز شریف کی نااہلی کے بعد ن لیگ منتشر ہو جائے گی۔ حکمران خاندان کی مفاداتی اور مالیاتی سیاست کو سورج ہمیشہ کے لیئے غروب ہونے والا ہے۔ عید مِلن پارٹی سے صاحبزادہ حسن رضا، ملک بخش الہی، میاں فہیم اختر، الحاج سرفراز تارڑ، مولانا محمد اکبر نقشبندی، ارشد مصطفائی، راؤ حسیب احمد، مفتی محمد حبیب قادری، پیر معاذ المصطفے قادری اور سید جواد الحسن کاظمی نے بھی خطاب کیا۔

مزید : میٹروپولیٹن 4


loading...