مقبوضہ کشمیر ، حریت رہنماؤں اور کارکنوں کی گرفتاریوں کیخلاف مظاہرے ، بھارتی فورسز کا وحشیانہ تشدد ، متعدد زخمی

مقبوضہ کشمیر ، حریت رہنماؤں اور کارکنوں کی گرفتاریوں کیخلاف مظاہرے ، بھارتی ...

  



سرینگر(صباح نیوز )مقبوضہ کشمیرمیں کرفیو اور دیگر پابندیوں کے باوجود لوگوں نے گزشتہ روز زبردست بھارت مخالف مظاہرے کئے جبکہ بھارتی فورسز کے اہلکاروں نے مظاہرین پر طاقت کا وحشیانہ استعمال کیا جس سے متعدد افراد زخمی ہو گئے ۔ مظاہروں کی کال متحدہ حریت قیادت اور متحدہ جہاد کونسل نے وادی میں بھارتی پولیس اور فوجیوں کی طرف سے حریت رہنماؤں ،کارکنوں اورنوجوانوں کے خلاف غیر قانونی اور جبری کریک ڈاؤن اور گرفتاریوں کی تازہ لہر کے خلاف احتجاج کیلئے دی تھی ۔ مظاہروں کامقصد امریکی انتظامیہ کی طرف سے بھارتی حکومت کو خوش کرنے کیلئے حزب المجاہدین کے سربراہ سید صلاح الدین کو بلا جواز طورپردہشت گرد قرار دینے کے اقدام کے خلاف احتجاج ریکارڈ کرانا بھی تھا ۔قابض انتظامیہ نے سرینگر اور دیگر علاقوں میں لوگوں کو احتجاجی مظاہرے کرنے سے روکنے کیلئے کرفیو اور دیگر پابندیاں عائد کردیں۔ جامع مسجد سرینگر میں نماز جمعہ کی اجازت نہیں دی گئی ۔ مظاہروں کی قیادت حریت رہنماؤں آغاسیدحسن الموسوی الصفوی، نور محمد کلوال ، قاضی یاسر اور تحرک حریت ، عوامی مجلس عمل اور سالویشن موومنٹ کے رہنماء کررہے تھے ۔ مظاہرین نے آزادی اور پاکستان کے حق میں اور بھارت کے خلاف فلک شگاف نعرے بلند کئے ۔انہوں نے متعدد مقامات پر پاکستانی پرچم بھی لہرایا ۔ دریں اثناء بھارتی پولیس نے جموں وکشمیر پیپلز لیگ کے چیئرمین مختار احمد وازہ کو اسلام آباد قصبے میں انکی رہائشگاہ سے گرفتار کرکے ایک مقامی تھانے میں نظربند کر دیا ۔ کل جماعتی حریت کانفرنس کے چیئرمین سیدعلی گیلانی نے سرینگر میں جاری ایک بیان میں بھارت کے بعض ذرائع ابلاغ کی طرف سے کشمیر اور کشمیریوں کے خلاف زہریلی پروپیگنڈہ مہم کی شدید مذمت کی ہے۔ انہوں نے کہا کہ بھارتی میڈیا فسطائی اور فرقہ پرست قوتوں کی ترجمانی کررہاہے ۔کشمیر ٹریڈرز اینڈ مینو فیکچررز فیڈریشن نے بھارتی حکومت کی طرف سے مقبوضہ کشمیر میں گڈز اینڈ سروسز ٹیکس کے نفاذ کے منصوبے کے خلاف مقبوضہ علاقے میں مکمل ہڑتال کی کال دی ہے۔ فیڈریشن کے صدر محمد یاسین خان نے سرینگر میں ایک پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ بھارتی حکومت کے اس اقدام کا مقصد کشمیرکوبھارتی آئین کی دفعہ 370کے تحت حاصل خصوصی حیثیت کو ختم کرنا ہے۔

مقبوضہ کشمیر

مزید : علاقائی


loading...