اسلحہ سمگلنگ کی روک تھام ، پاکستان ،چین اور ایس سی او کے رکن ممالک سرحدی فوجی مشقیں کریں گے

اسلحہ سمگلنگ کی روک تھام ، پاکستان ،چین اور ایس سی او کے رکن ممالک سرحدی فوجی ...

  



بیجنگ (آئی این پی ) پاکستان ، چین اور شنگھائی تعاون تنظیم (ایس سی او )کے دیگر رکن ممالک اسلحہ کی سمگلنگ کی روک تھام کیلئے اپنے سرحدی علاقوں کے ساتھ باقاعدگی سے فوجی مشقیں کریں گے۔ غیر ملکی میڈیا کے مطابق اسلحہ کی روک تھام کے مقصد کیلئے ایس سی او جو کہ چین ، روس ، قازقستان ، کرغزستان ، تاجکستان ، ازبکستان ، بھارت اور پاکستان پر مشتمل ایک سکیورٹی بلاک ہے ،سرحدوں کی سخت نگرانی کیلئے تمام ضروری اقدامات کرے گا ،فوجی مشق ایک باقاعدہ حصہ ہو گا۔یہ بات ہتھیاروں کی سمگلنگ کیخلاف دفاع کو فروغ دینے کیلئے چین کے سنکیانگ علاقے میں منعقدہ چین اور کرغزستان کی بارڈر فورسز کی مشقوں کے دوران بتائی گئی ،چین نے علاقے میں انتہا پسندوں کی طرف سے حملوں کے خدشے کے پیش نظر اپنے انتہائی مغرب میں سنکیانگ میں سکیورٹی میں اضافہ کر دیا ہے جبکہ ہمسائیہ ممالک کے ہیلی کاپٹروں ، بکتر بند جیپوں اور 700سرحدی پولیس اہلکاروں نے سنکیانگ کی کرغز کمشنری میں ہونیوالی مشق میں حصہ لیا۔چینی افسر چین ڈنگ وو جو کہ مشق انچارج تھے ، ان کا کہنا تھا کہ فوجی چین میں کرغزستان کی طرف سے انتہا پسندوں کی طرف سے سمگل کئے جانیوالے ہتھیار ضبط کئے جارہے ہیں ،بیجنگ کا کہنا ہے کہ سنکیانگ کی سلامتی کو انتہاپسند ، علیحدگی پسندوں بالخصوص مشرقی ترکستان اسلامی تحریک کی طرف سے خطرہ لاحق ہے۔سنکیانگ چین کے بیلٹ و روڈ منصوبے کا ایک اہم حصہ ہے ،اس منصوبے کا مقصد قدیم شاہراہ ریشم سے مشرق وسطیٰ اور یورپ اور اس سے آگے کے ساتھ تجارت و توانائی کے نیٹ ورک کو فروغ دینا ہے ، سنکیانگ کی سرحد آٹھ علیحدہ ملکوں کے ساتھ 5700کلومیٹر لمبی ہے اور 15خشک گودیا ں ہیں۔

فوجی مشقیں

مزید : صفحہ اول


loading...