ملتان،سانحہ پارا چنار، وحدت المسلمین، شیعہ علماء کونسل کے زیر اہتمام احتجاجی مظاہرے

ملتان،سانحہ پارا چنار، وحدت المسلمین، شیعہ علماء کونسل کے زیر اہتمام ...

  



ملتان، مظفر گڑھ، محسن وال، شہر سلطان، اوچشریف، ڈیرہ غازیخان سخی سرور(سٹی رپورٹر، نمائندگان) سانحہ پاراچنار کے متاثرین سے اظہار یکجہتی اور حکومتی بے حسی کیخلاف مجلس و حدت مسلمین ، شیعہ علما کونسل کے زیر اہتمام گزشتہ روز ملتان، مظفر گڑھ، ڈیرہ غازیخان ، لیہ ، چوج اعظم، رحیم یار خان، علی پور اور اوچشریف سمیت جنوبی پنجاب بھر میں احتجاجی مظاہرے کیئے گئے اور ریلیاں نکالی گئیں جس میں حکومت کیخلاف شدید نعرہ بازی کی گئی۔ اس سلسلے میں ملتان سے سٹی رپورٹر کے مطابق سانحہ پارہ چنار کے خلاف مجلس وحدت مسلمین کے زیر اہتمام آج ملک بھر میں یوم احتجاج منایا گیا۔آئمہ مساجد نے جمعہ کے خطبات میں سانحہ پارہ چنار پر حکومتی بے حسی پر کڑی تنقید کرتے ہوئے کہا کہ پارا چنار کے معاملے پروزیر اعظم کی خاموشی تکفیری قوتوں کی خوشنودی حاصل کرنے کے لیے ہے۔ریاست کے شہریوں کے حقوق کا تحفظ حکومت کی ذمہ داری ہے۔جو حکومت عوام کو تحفظ فراہم نہیں کر سکتی اس کے پاس اقتدار میں رہنے کا کوئی جواز باقی نہیں رہتا۔اگر پارا چنار کے لوگوں کے مسائل کا سنجیدگی سے نوٹس لیا جاتا تو آج اس علاقے کو دہشت گردی کا المناک واقعات کاسامنا نہ کرنا پڑتا ۔پارہ چنار کے عوام سے حب الوطنی کی بھار ی قیمت وصول کی جا رہی ہے۔نماز جمعہ کے بعد اسلام آباد، لاہور،کراچی،کوئٹہ،ملتان اور پشاور سمیت ملک کے دیگر بڑے شہروں میں احتجاجی ریلیاں بھی نکالی گئیں جن میں سینکڑوں کی تعداد دمیں لوگوں نے شرکت کی۔شرکا نے بینرز اور پلے کارڈز اٹھا رکھے تھے جن پر پارا چنار کی عوام کی حمایت اور حکومت کے خلاف نعرے درج تھے،جنوبی پنجاب کے اضلاع ملتان،مظفرگڑھ،ڈیرہ غازیخان،لیہ،چوک اعظم،رحیم یار خان ،علی پور اور اوچشریف میں احتجاجی مظاہرے اور ریلیاں نکالی گئیں، ملتان میں مرکزی ریلی نماز جمعہ کے بعد جامع مسجد الحسین سے نکالی گئی ،ریلی کی قیادت صوبائی سیکرٹری جنرل علامہ اقتدار حسین نقوی، علامہ قاضی نادر حسین علوی،صوبائی رہنما محمد عباس صدیقی،مہر سخاوت سیال اور ضلعی سیکرٹری جنرل سید ندیم عباس کاظمی نے کی۔ ریلی سے خطاب کرتے ہوئے علامہ اقتدار نقوی نے کہا نواز شریف نے پارا چنار کو نظر انداز کر کے وزارت عظمی کے عہدے سے غداری کی ہے۔وزیر اعظم کا تعلق کسی مخصوص فکر یا طبقے سے نہیں ہوتا بلکہ پورے ملک کی عوام سے ہوتا ہے۔پارا چنار کے لوگوں کی تضحیک ناقابل برداشت ہے پارا چنار کے لوگ مظلوم ہیں مگر حق کے لیے آواز بلند کرنا جانتے ہیں۔ ان مظلومین کی آواز کو طاقت یا اختیارات کے ناجائز استعمال سے دبایا نہیں جا سکتا۔ دریں اثناء شیعہ علماء کونسل ملتان کے زیراہتمام سانحہ پارا چنار کے متاثرین سے اظہار یکجہتی کے لئے چوک نواں شہر پر مظاہرہ کیا گیا جس کی قیادت شیعہ علماء کونسل کے ضلعی صدر علامہ کاشف ظہور نقوی نے کی اس موقع پر سید بشارت عباس قریشی ، پی ٹی آئی کے رکن قومی اسمبلی ملک عامر ڈوگر، پیپلز پارٹی کے سابق ایم پی اے ڈاکٹر جاوید صدیقی ، سرائیکی رہنما عابدہ بخاری، مطلوب بخاری ،مولانا تقی حقانی, ایم ایچ نقوی, ملتان ڈویژن کے صدر سید محمد شاہ, مرکزی تنظیم لائیسنسداران کے صدر مذین عباس چاون,متیاز صدیقی, جے ایس او کے مرکزی سیکریٹری جنرل ذیشان شمسی, شیعہ علماء کونسل تحصیل ملتان کے صدر مولانا غلام مصطفیٰ خان, ڈویژنل جنرل سیکریٹری سید علی قاسم نقوی جے ایس اہ پنجاب کے صدرذیشان حیدر مجلس وحدت مسلمین کے رہنما ء علامہ اقتدار حسین نقوی،, ملتان ڈویژن کے صدریاسر صدیقی مولانا غلام مرتضے,ٰ انیس نقوی, فیاض زیدی, افضال زیدی, باقر حسین, محمدمہدی, آصف شاہ, سید محمد علی رضوی, شبیر ساقی ودویگر نے کثیر تعداد میں شرکت کی اس موقع پر شیعہ علماء کونسل کے رہنماؤں سے سانحہ پارا چنار کے سلسلے میں اظہار یکجہتی کیا اس موقع پر علامہ کاشف ظہور نقوی نے کہا کہ شیعہ قوم قیام پاکستان سے لیکر آج تک قربانیاں دے رہی ہے دہشت گرد آزاد پھر رہے ہیں اور امن پسند نشانہ بن رہے ہیں لیکن حکمران خاموش تماشائی کا کردار ادا کر رہے ہیں ایسے حالات میں جنرل قمر جاوید با جوہ کا سانحہ ]پارا چنار کے متاثرین کے ساتھ اظہار یکجہتی خوش آئند اقدام ہے۔ مظفر گڑھ سے بیورو رپورٹ ، نامہ نگار کے مطابق راچنار سانحہ کیخلاف شیعہ علماء کونسل اور جعفریہ سٹوڈنٹس آرگنائزیشن کی جانب سے احتجاجی ریلی نکالی گئی اور مظاہرہ کیاگیا پاراچنار سانحہ کیخلاف مظفرگڑھ میں شیعہ علماء کونسل کے ضلعی صدر سید غفنفر عباس نقوی. علا مہ شبیر حیدر ی. سید گلزار عباس نقوی اور جعفریہ سٹوڈنٹس آرگنائزیشن کی جانب سے امام بارگاہ حسینیہ سے احتجاجی ریلی نکالی گئی، احتجاجی ریلی قنوان چوک پر پہنچی تو ریلی کے شرکاء کی جانب سے احتجاجی مظاہرہ کیاگیا،مظاہرین کا کہناتھا کہ سانحہ پاراچنار پر حکمرانوں کی مجرمانہ خاموشی قابل مذمت ہے، مقررین کا کہناتھا کہ سانحہ پارا چنار پر وزیراعظم میاں نوازشریف کا افسوس کے لیے پارا چنار نہ جانا حکومتی لاپرواہی کا ثبوت ہے.اس موقع پرملک صفدر . مولانا محمد ہاشم عرفانی. مولان ظفراقبال.قرلشیی سید ہلال جاوید کاظمی ڈاکٹر مرید عباس لغاری. سید ظہیر حیدر.دیگر نے خطاب کیا ہے اورمظاہرین نے حکومت کیخلاف نعرہ بازی بھی کی۔ محسن وال سے نمائندہ پاکستان کے مطابق شیعہ علماء کونسل کے زیر اہتمام سانحہ پار ہ چنار کیخلاف امام بارگاہ قصر ابی طالب سے ٹی چوک تک ریلی نکالی گئی،ریلی کے شرکاء نے پلے کارڈ ز اُٹھا رکھے جن پر حکومت کیخلاف اور دہشت گردی کے خاتمہ کے حوالے سے نعرے درج تھے،مظاہرین نے امریکہ کیخلاف شدید نعرے بازی کی،ریلی کی قیادت شیعہ علماء کونسل تحصیل میاں چنوں کے صدر آصف عباس گل کا کہنا تھا پارہ چنار سانحہ میں جاں بحق ہونے والوں کے لواحقین کے مطالبات جلد از جلد پورے کئے جائیں اور دہشت گردوں کو گرفتار کرکے قرار داد سزا دی جائے۔ شہر سلطان سے نامہ نگار کے مطابق قائد ملت جعفریہ علامہ سید ساجد علی نقوی کی ہدائیت پرشہر سلطان میں بھی نہتے بے گناہ اور مظلوم پارہ چنار، کوئیٹہ اور کراچی کے شہداء کے ورثاء کے ساتھ ساتھ اظہار یک جہتی اور قاتلوں کی فوری گرفتاری کیلئے مرکزی امام بارگاہ شہر سلطان سے بعد نماز جمعہ ایک پر امن ریلی زیرقیادت حضرت مولانا انوارلحسن نوری صوبائی راہنما شیعہ علما کونسل پنجاب اور علامہ سید ارشاد حسین نقوی نکالی گئی پر امن ریلی میں کثیر تعداد میں عوام نے شرکت کی ریلی کے شرکاء نے پلے کارڈ اور احتجاجی نعروں سے لکھے بینرز اٹھا رکھے تھے جن پر سفاک قاتلوں ، وہشت گردوں اور ملک مخالف عناصر وں کی سرکوبی اور قلع قمع کیلئے احتجاجی نعرے درج تھے ریلی کے شرکاء نے جی ٹی روڈ پر پہنچ کر اپنا احتجاج کیا شرکاء سے خطاب کرتے ہوئے مولانا انوارلحسن نوری نے اور علامہ سید ارشاد حسین نقوی نے شہداء کے ساتھ بربریت کی مزمت کرتے ہوئے حکمرانوں کو سخت تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے مزید کہا کہ بے حس حکمرانوں کو پارہ چنار، کوئیٹہ اور کراچی کے مظلوم بے گناہ شہید ہونے والے نظر نہیں آتے کسی بھی اعلیٰ عہدیدار نے مذکورہ بالا شہداء کے ورثاء سے تعزیت یا ہمدردی کیلئے وقت نہیں نکالا انہوں نے مزید کہا کہ ملت جعفریہ پر امن ملک دوست ہیں پاکستان کے بنانے میں ملت جعفریہ کی سب سے بڑی قربانیاں ہیں ظالم حکمران ملت جعفریہ کے صبر کا امتحان نہ لیں تو بہتر ہے انہوں نے مزید کہا کہ ملت جعفریہ اپنے شہیدوں کا خون رائیگاں نہیں جانے دینگے۔ اوچ شریف سے نمائندہ پاکستان کے مطابق مجلس وحدت مسلمین اوچ شریف نے قائد علامہ راجا ناصر عباس جعفری کے اعلان پر سانحہ پارا چنار اور کوئٹہ کے خلاف احتجاج کیا اور سانحہ کے شہدا کے قاتلوں کو فوری گرفتار کرکے کیفر کردار تک پہنچانے کا مطالبہ کیا ہے سانحہ کے شہدا سے اظہار عقیدت کے لیے مجلس شہدا کا اہتمام کیا گیا مجلس کے بعد جامع مسجد کے باہر علامتی دھرنا بھی دیا گیا ہے مظاہرین نے کہا سانحہ کی جتنی مذمت کی جائے کم ہے دہشت گرد حملے کر کے ہمارے حوصلے پست نہیں کر سکتے انہوں نے کہا سانحہ کے شہدا کے لواحقین سے حکومتی ارکان کی جانب سے پہنچ کر ہمدردی کا اظہار نہ کرنا انتہائی افسوس ہے۔ ڈیرہ غازیخان سے نمائندہ خصوصی کے مطابق شیعہ علماء کونسل کے زیرِ اہتمام سانحہ پارہ چنار کیخلاف مرکزی امام بارگاہ حیدریہ سے حسینی چوک تک احتجاجی ریلی نکالی گئی ۔ ریلی کے شرکاء نے سانحہ پارہ چنار کے شہداء سے اظہار یکجہتی کیلئے ہاتھوں میں بینرز اور پلے کارڈز اٹھا رکھے تھے ۔ ریلی کے شرکاء نے حسینی چوک پر پہنچ کر واقعہ کیخلاف شدید نعرے بازی کی اور حکومت سے سانحہ میں ملوث دہشت گردوں کی فوری گرفتاری اور انہیں کیفر کردار تک پہنچانے کا مطالبہ کیا ۔تفصیلات کے مطابق شیعہ علماء کونسل کے زیرِ اہتمام مر کزی امام بارگاہ حیدریہ کے سامنے احتجاجی مظا ہر ہ کیا گیا اور ریلی نکالی گئی شرکاء سے علامہ سید شاہد حُسین نقوی ،مولانا سجاد حُسین انقلابی اور میاں ضیغم عباس صدیقی نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ پاکستان اور اسلام دشمن عناصر نے ملکی سا لمیت اور اتحاد و وحدت پر کاری ضرب لگاتے ہوئے پاکستان کی نظریاتی سرحدوں کے محافظ پارہ چنار کی عوام پر خود کش حملے کر کے 100سے زائد روزہ داروں کوشہید کر دیا۔ دہشتگردی کاشکار عوام کے زخموں پر مرہم رکھنے کی بجائے انہی نہتے اور مظلوم عوام پر فائر کھول دئیے گئے جس کی زد میں آکر بھی دس افراد شہید ہوئے جس کی جتنی مذمت کی جائے کم ہے۔ وزیر اعظم کو وہاں جا کر دکھی عوام کے دکھ در میں شریک ہونا چاہیے تھا اور ملک کے دیگر علاقوں سے بڑھ کر امدادی پیکج کا اعلان کرنا چاہیے تھا کیوں کہ پارہ چنار کے لوگ ہمیشہ وطن دشمن دہشتگردوں کے مقابلے میں اپنے وطن عزیز کے قربانیاں دیتے آ رہے ہیں۔ہم مطالبہ کرتے ہیں بے حسی کی اس روش کو فوری ترک کرکے پارہ چنار کے عوام کے دکھوں کا مداوا کیا جائے اور دہشت گردی سے متاثرہ مظلوم عوام کے تمام مطالبات منظور کر کے انہیں مکمل تحفظ دیا جائے۔ اگر ہمارے مطالبات پر فوری عمل نہ کیا گیا تو ہم اگلے لائحہ عمل کا اعلان کریں گے۔ دریں اثناء پاراچنارکوئٹہ سانحہ سمیت دہشت گردی کے خلاف ڈسٹرکٹ بار ایسوسی ایشن ڈیرہ غازیخان کے زیراہتمام احتجاجی ریلی اور ایوان عدل گیٹ کے سامنے احتجاجی مظاہرہ پاراچنار اہل تشیع کا گڑھ سکیورٹی ایجنسیوں کے حصار میں پاراچنار میں دہشت گردی کا بڑا واقعہ سکیورٹی کارکردگی پر سوالیہ نشان اہل تشیع کو کون ٹارگٹ کررہاہے اور فرقہ بندی کو کون ہوا دے رہاہے۔چیف آف آرمی سٹاف قمر جاوید باجوہ نوٹس لیں موجودہ حکومت پر اب اعتبار نہیں حکومت عوام کے جان ومال کا تحفظ کرنے میں ناکام ہے احتجاجی شرکاء ندیم حیدر نقوی ایڈووکیٹ ،سابق بار صدر بہرام خان بزدار ایڈووکیٹ،جنرل سیکرٹری ملک فہیم سعید چنگوانی ایڈووکیٹ ،سید فضل شاہ کا خطاب احتجاجی مظاہرے میں ڈسٹرکٹ بار صدر شہزادہ احسان کریم میرانی ،یاسر خان کھوسہ ،غلام فریدجتوئی ،رحمت رضا کھوسہ ،منظور خان لُنڈ،طیب کلیم بخاری ،جہانگیر خان وڈانی ،مرز امحمد ادریس،منظور قادرلُنڈ،محمد علی خان پتافی ،میاں فہیم اکبر،میاں ارشد صدیقی ،میاں انیس الحسنین صدیقی دیگر شریک تھے۔احتجاجی ریلی میں حکومت کے خلاف نعرہ بازی کی گئی اور آرمی چیف سے اپیل کی گئی کہ وہ اہل تشیع کو فول پروف سکیورٹی دیں اور دہشت گردوں کو کیفرکردار تک پہنچائیں ۔ سخی سرور سے نامہ نگار کے مطابق سانحہ پارہ چنار میں ہونے والے بم دھماکوں دہشت گردی کے خلاف اور مظلوم پار چنارہ کے لوگوں سے اظہار یکجہتی کے لیے ور حکومت کی ناکامی پر مجلس وحدت مسلمین ،شیعہ علماء کونسل ،تحریک نافذ فقہ جعفریہ امامیہ سٹوڈنٹس کی جانب سے احتجاجی مظاہرہ کرتے ہو ئے دھرنا دیا گیا۔ ،یہ کس کا لہو یہ کون مرا بد معاش حکومت بول نعرے بازی کی گئی ۔وفاقی کے پی کے کی صوبائی حکومت پر کڑی تنقید ہو ئے ناظم اعلیٰ جامعتہ الحسین سخی سرور علامہ ظفر عباس اور دیگر شیعہ رہنماوں نے خطاب کرتے ہو ئے کہا کہ داعش کے حامی لال مسجد والے آزاد ہیں،حکومت صرف ٖفوٹو سیشن تک ہے۔حکومت دہشت گردی کو کنٹرول کرنے میں نا کام ہو چکی ہے۔مسلسل پارہ چنارہ کے شیعہ کو بم دھماکے یا حملے کرکے ماراجا رہا ہے۔عمران اور پرویز خٹک نے بھی آنا گوارہ نہ کیا،پانا کا رونا رونے والوں کو پارہ چنار کے لوگوں کا بے گناہ خون نظر نہیں آتا ہے۔وفاقی حکومت سے پہلے کے پی کے کی ذمہ داری تھی وہ پارہ چنار پہنچتی ۔وزیر اعظم پاکستان کو کوئی پرواہ نہ ہے۔اس سانحہ کے ذمہ داروں کو سر عام پھانسی دی جائے ۔اور پارہ چنار کے لوگوں کے مطالبات فوری پر مانا جائے۔اس موقع پر زوار بلال حسین صدر اہل تشیع ڈاکٹر غلام رضا ،ماسٹر غلام سرور ،کاظم حسین ،محمد اقبال ،وغیرہ موجود تھے۔

سانحہ پاراچنار احتجاج

مزید : کراچی صفحہ اول