ملتان ٹیکس بار کا ضلع خانیوال کو ساہیوال میں شامل کرنے پر احتجاج

ملتان ٹیکس بار کا ضلع خانیوال کو ساہیوال میں شامل کرنے پر احتجاج

  



ملتان(نیوز رپورٹر) فیڈرل بورڈ آف ریونیو (ایف بی آر ) نے ریجنل ٹیکس آفس (آر ٹی او) ان لینڈ ریونیو ساہیوال کے چیف کمشنر اور کمشنر کے دائرہ کار، آر ٹی او کی حدود اور اختیارات کا نوٹیفکیشن جاری کردیا ہے ۔ توٹیفکیشن آج یکم جولائی 2017ء سے مؤثر ہوگا۔ ملتان ٹیکس بار ایسوسی ایشن نے ضلع (بقیہ نمبر47صفحہ12پر )

خانیوال کو آر ٹی او ساہیوال کا حصہ بنانے اور ساہیوال مٰن شامل کرنے پر شدید احتجاج کرتے ہوئے 3جولائی (پیر) کو جنرل باڈی اجلاس میں طلب کرلیا ہے۔ ملتان ٹیکس بار ایسوسی ایشن نے وفاقی حکومت، وفاقی وزیر خزانہ چیئرمین ایف بی آر کو اس حوالے سے بارہا تحفظات اور خدشات سے آگاہ کیا لیکن ایف بی آر نے ایک نہ سنی اور خانیوال کو آر ٹی او ساہیوال میں شامل کردیا قبل ازیں ٹیکس بار ایسوسی ایشن نے چیئرمین ایف بی آر کو 19جون 2017ء کو دورہ ملتان کے موقع پر فیصلہ واپس لینے کی درخواست کی تھی جس پر ایسوسی ایشن کے صدر بشیر فخرالدین اور دیگر عہدیداروں کو یقین دہانی کروائی گئی کہ فیصلہ واپس لے لیا جائیگا ٹیکس بار کے صدر نے کہا کہ ضلع خانیوال کی آر ٹی او ساہیوال میں شمولیت جنوبی پنجاب کی محرومی و پسماندگی اور استحصال میں اضافہ کا اقدام ہے جسے مسترد کرتے ہیں نوٹیفکیشن کے مطابق نئے آر ٹی او میں ضلع ساہیوا، اوکاڑہ، قصور، خانیوال اور وہاڑی شامل کیئے گئے ہیں چیف کشمنرآر ٹی او ساہیوال کے ماتحت اور دائرہ اختیارات میں آنیوالے افسروں میں کمشنر ان لینڈ ریونیو ساہیوال زون ، کمشنر ان لینڈ ریونیو (اکاڑہ زون) آرٹی او ساہیوال کمشنر ان لینڈ ریونیو (انفارمیشن) پروسسسینگ ٹیکس فیلیئشن اینڈ ایچ آر ایم (آر ٹی او) ساہیوال شامل ہوں گے۔

مزید : ملتان صفحہ آخر


loading...