ضلع کونسل مردان کا 9ارب 90کروڑ 30لاکھ کا بجٹ منظور

ضلع کونسل مردان کا 9ارب 90کروڑ 30لاکھ کا بجٹ منظور

  



مردان( بیورورپورٹ) ضلع کونسل مردان نے سال 2017-18کے لئے 9 ارب 90کروڑ اور30لاکھ روپے بجٹ کی متفقہ منظوری دے دی بجٹ میں ترقیاتی منصوبوں کے لئے48کروڑ اور80لاکھ جبکہ 33کروڑ 83لاکھ اور30ہزار روپے غیر ترقیاتی کاموں کے لئے رکھے گئے ہیں جمعہ کو ضلع کونسل کا اجلاس ایک روزہ قفے کے بعد کنوینئر اسد کشمیری کی زیر صدارت منعقد ہوا اجلاس میں بجٹ تجاویز پر بحث کرتے ہوئے اپوزیشن لیڈر ملک شوکت ،پارلیمانی لیڈر شاہد باچہ، واجد علی، حبیب رسول ، ڈاکٹر عزیز الوہاب ، سجاد خان ، مولانا امانت شاہ حقانی ، اپوزیشن لیڈر ملک شوکت ، اسفندیار ، طارق عزیز ، امانت مسیح کے علاوہ خواتین ممبران عالیہ نواب ، سعدیہ مایار اور دیگر نے حصہ لیتے ہوئے بعض تجاویز دیں اورمسائل کے حل کے لئے ضلعی ناظم سے ٹھوس اقدامات اٹھانے کا مطالبہ کیا اپوزیشن لیڈر ملک شوکت نے بجٹ کی متفقہ طورپر پاس کرانے کے لئے تجویز دی جس کے بعد کنویئر اسد علی کشمیری نے کونسل سے رائے طلب کی جس پر تمام اراکین نے ہاتھ اٹھاکر اورڈیسک بجاکر بجٹ کی متفقہ منظوری دے دی منظورشدہ بجٹ کے مطابق تنخواہوں کے لئے 8ارب 54کروڑ ،75لاکھ اور69ہزار روپے رکھے گئے ہیں جبکہ ترقیاتی منصوبوں کے لئے48کروڑ اور80لاکھ سے زائد رقم مختص کی گئی ہے اس طرح33کروڑ 83لاکھ اور30ہزار روپے غیر ترقیاتی کاموں کے لئے رکھے گئے ہیں کونسل نے سال 2016-17کے ضمنی بجٹ 17کروڑ 67لاکھ اور 80ہزارروپے کی بھی متفقہ منظوری دے دی اس موقع پر خطاب کرتے ضلع ناظم نے اپوزیشن سمیت تمام کونسل کے اراکین کا شکریہ اداکرتے ہوئے کہاکہ بجٹ میں شہرکی ترقی کے لئے جامع پلان ترتیب دیاگیاہے اور پہلی بار محکمہ صحت کو ای ڈیپارٹمنٹ بنایاجائے گا اس طرح بجٹ میں میڈیکل انجینئرنگ اور دیگر فنی شعبوں میں تعلیم حاصل کرنے والے طلباء کے لئے ایک لاکھ روپے بلاسود قرضہ دینے کی تجویز پیش کی گئی ہے جبکہ میٹرک اور ایف اے ایف ایس سی کے ذہین طلباء کے لئے ستوری دا مردان پروگرام کے تحت ایک کروڑ 50لاکھ روپے رکھے گئے ہیں جو سرکاری اور پرائیوٹ اداروں کے 100پوزیشن ہولڈرز طلباء کو دیئے جائیں گے اس طرح ضلع بھر کے تمام یونین کونسلوں کے سرکاری سکولوں کے نادار طلباء کے لئے یونیفارم اور سٹیشنری ضلعی حکومت کے فنڈز سے خریدی جائے گی ضلع ناظم حمایت اللہ مایار نے کہا کہ ضلع کے تمام فنڈز ممبران کی مشاورت سے خرچ کیجائیگی۔ مردان کی ترقی ہم سب کی اولین ترجیح ہے۔ حمایت اللہ مایار نے ایگزیکیوٹنگ محکموں سے ترقیاتی سکیموں کے فنڈز میں کمیشن لینے کی سختی سے مخالفت کی اور کہا کہ حلال رزق کمانا عین عبادت ہے۔ ملک میں توانائی بحران سمیت صحت اور تعلیم کی سہولتیں نہ ہونے کے برابر ہیں اس کے حل کے لئے ہمیں ایماندار اوردیانت دار لوگوں کو سامنے لاناہوگا ۔

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر


loading...