حکمرانوں سے اسلامی نظام کے نفاذ کی توقع عبث ہے ،:مولانا عبدالرشید

حکمرانوں سے اسلامی نظام کے نفاذ کی توقع عبث ہے ،:مولانا عبدالرشید

  



باجو ڑ ایجنسی ( نمائندہ پاکستان )حکمرانوں سے اسلام کے نفاذ کی اُمید رکھنا احمقانہ سوچ ہے۔پاکستان دو قومی نظریے کے بنیاد پر بنا ہے ۔سیکولر قوتوں کے سازشوں کو ناکام بنانے کیلئے عوام جماعت کے جھنڈے تلے جمع ہوں ۔خدانخواستہ ملک پر امتحان آنے کی صورت میں علماء اور مدارس کے طلباء ہراول دستے کا کردار ادا کریں گے۔ان خیالات کا اظہار جماعت علمائے اسلام باجوڑ کے امیر اور سابق سنیٹر مولانا عبد الرشید نے رحمان آباد نواں کلی میں مولانا جاوید اور قاری احسان اللہ کے رہائش گاہ پر ایک شمولیتی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کیا اُنہوں نے کہا کہ جماعت علمائے اسلام گزشتہ سو سالوں سے برصغیر پاک و ہند میں پہلی مذہبی جماعت ہے جن کے ہزاروں علمائے کرام نے پاکستان کی آذادی کیلئے اپنی جانوں کی قربانیاں صرف اس لئے دی کہ یہاں اسلام کا بول بالا ہوں لیکن روز اول سے اس ملک پر جمہوریت کے دعوے داروں نے حکمرانی کرکے اسلام کا اصلی چہرہ مسخ کرنے کی مذموم کو ششیں کی ہم ملک میں اس طرح کے افراد کو لانا چاہتے ہیں جو وزیر اؑ ظم سے لیکر ممبران قومی اسمبلی تک حقیقی معنوں میں اسلام سے واقف اور لوگوں کیلئے امامت بھی کریں حکمرانوں سے اسلام کے نفاذ کی اُمید رکھنا بھینس کے آگے بین بجانا ہے عمران خان پختونوں کو نچوانے کیلئے نکل کر پوری قوم کو گمراہ کرنے پر تُلے ہوئے ہے حکو مت اور سیاست کے علمائے کرام اور دین کے سمجھ بوج رکھنے والے ہی اصل مستحق ہیں کیونکہ علمائے کرام رسول کے اصل وارث اور جان نشین ہیں کیونکہ وہ ایک بہترین جرنیل ،سیاست دان اور امیر وقت تھے پیغمبر اسلام کی پیروی کرتے ہوئے حکومت کرنا ہم اپنا دینی فریضہ سمجھتے ہیں دنیا میں اسلام اور مسلمان لازم و ملزوم ہے الہامی کتاب سے بغاوت کرنے والوں کی ذندگیاں جانوروں سے بھی بد تر ہے اس موقع پر دیگر مقررین قاری نور علی ،مولانا محمد لائق ،حاجی اکبر جان ،مفتی محسن اور مولانامحمد طاہر حنفی ، سیکرٹری اطلاعات مجاہد خان ودیگر نے کہا کہ علمائے کرام کی توہین کرنا اسلام سے خروج کا باعث بن سکتا ہے شعائر اللہ کی حفاظت کیلئے علمائے کرام کی کاوششوں کی پوری دنیا کے مسلمان قدر کی نگاہ سے دیکھتے ہیں شمولیتی تقریب میں برہان الدین، معراج الدین ،ظاہر اللہ ،گل محمد ،محمد ادریس ،طارق خان ،موسی ،فاروق،نور اللہ سمیت درجنوں افراد نے اپنے خاندانوں سمیت جماعت علمائے اسلام میں شمولیت کا اعلان کرتے ہوئے پارٹی قائدین پر مکمل اعتماد کا اظہار کیا ۔

مزید : پشاورصفحہ آخر


loading...