پاکستان نے جماعت الدعوۃ کی ذیلی تنظیم ’’تحریک آزادی جموں و کشمیر ‘‘ پر خاموشی کے ساتھ پابندی عائد کر دی :بھارتی ٹی وی کا دعویٰ

پاکستان نے جماعت الدعوۃ کی ذیلی تنظیم ’’تحریک آزادی جموں و کشمیر ‘‘ پر ...
پاکستان نے جماعت الدعوۃ کی ذیلی تنظیم ’’تحریک آزادی جموں و کشمیر ‘‘ پر خاموشی کے ساتھ پابندی عائد کر دی :بھارتی ٹی وی کا دعویٰ

  



نئی دہلی (ڈیلی پاکستان آن لائن)بھارتی میڈیا نے دعویٰ کیا ہے کہ امریکہ کی طرف سے حزب المجاہدین کے امیر سید صلاح الدین کو عالمی دہشت گرد قرار دینے کے بعد پاکستانی حکومت نے جماعت الدعوۃ کے سربراہ حافظ محمد سعید کی نظر بندی سے چند روز قبل بننے والی ذیلی تنظیم ’’تحریک آزادی جموں و کشمیر‘‘ پر خاموشی سے پابندی عائد کر دی ہے،پاکستان نے یہ پابندی عالمی برادری کی طرف سے کسی ممکنہ ردعمل سے بچنے کے لئے لگائی ہے ،واضح رہے کہ بھارتی میڈیا کے جھوٹ کا پول اس بات سے ہی کھل جاتا ہے کہ اس تنظیم کو حافظ سعید کی نظر بندی سے چند روز قبل قائم کیا گیا تھا حالانکہ یہ تنظیم کئی سال پرانی اور اس میں پاکستان کی تمام سیاسی و مذہبی جماعتوں کے مرکزی رہنما شامل ہیں۔

تفصیلات کے مطابق بھارتی نجی ٹی وی چینل ’’این ڈی ٹی وی ‘‘ نے اپنی ایک رپورٹ میں اس بات کا انکشاف کیا ہے کہ امریکہ کی طرف سے بھارتی وزیر اعظم مودی کی ڈونلڈ ٹرمپ سے ملاقات سے چند گھنٹے پہلے حزب المجاہدین کے سربراہ سید صلاح الدین کو عالمی دہشت گرد قرار دیا تو پاکستانی حکومت نے بظاہر اس پر شدید رد عمل کا اظہار کیا لیکن اندرون خانہ نواز شریف کی حکومت سید صلاح الدین کو دہشت گرد قرار دینے کے بعد عالمی برادری کے ممکنہ دباؤ سے بچنے کے لئے ہاتھ پاؤں مار رہی ہے ۔بیرونی دباؤ سے بچنے کے لئے پاکستانی حکومت نے انتہائی راز داری اور خاموشی کے ساتھ جماعت الدعوۃ کی ذیلی تنظیم اور حافظ محمد سعید کی گرفتاری سے چند روز قبل معرض وجود میں آنے والی ’’تحریک آزادی جموں و کشمیر‘‘ پر پابندی عائد کر دی ہے ۔بھارتی ٹی وی کا کہنا تھا کہ حافظ سعید کی نظر بندی سے قبل جماعت الدعوۃ نے ’’تحریک آزادی جموں و کشمیر کے بینر ز اور بورڈز شاہراؤں پر نصب کرتے ہوئے ملک بھر میں آزادی کشمیر کے لئے ملک میں جاری اپنی مہم کو تیز اور 5فروری کو ’’یوم کشمیر‘‘ کے موقع پر اسی ذیلی تنظیم کے زیر اہتمام ریلیاں ،جلسے جلوس اور مظاہرے کرنے کا اعلان کیا تھا ،تاہم اب پاکستانی حکومت نے نئی صورتحال میں کسی ممکنہ عالمی رد عمل سے بچنے کے لئے جماعت الدعوۃ کی نومولود تنظیم ’’تحریک آزادی جموں و کشمیر‘‘ پر بھی پابندی عائد کر دی ہے ۔بھارتی ٹی وی کا کہنا تھا کہ پاکستان اقوام متحدہ کی فہرست میں شامل دہشت گرد تنظیموں کے خلاف پابندیوں پر مکمل طورپر عملدرآمد نہیں کر رہا ،مودی حکومت نے اس حوالے سے عالمی برادری کے سامنے بھی اس مسئلے کو اٹھایا ہے ،جس کی وجہ سے بین الاقوامی برادری کا پاکستان پر دباؤ بڑھ گیا ہے ۔بھارتی ٹی وی نے دعویٰ کرتے ہوئے کہا کہ مودی حکومت کے دباؤ کا نتیجہ ہے کہ امریکہ نے حزب المجاہدین کے سربراہ سید صلاح الدین کو عالمی دہشت گرد قرار دیا ہے جس کے کچھ گھنٹوں بعد ہی بھارتی وزیر اعظم نریندر مودی اور امریکی صدر ڈونالڈ ٹرمپ کے درمیان پہلی باہمی ملاقات ہوئی تھی۔دوسری طرف واضح رہے کہ ’’تحریک آزادی جموں و  کشمیر‘‘ جماعت الدعوۃ کی ذیلی تنظیم نہیں ہے بلکہ بھارتی تسلط سے آزادی حاصل کرنے کی جدوجہد کرنے والے کشمیری حریت پسندوں کی اصولی موقف کو دنیا بھر میں اجاگر کرنے کے لئے  پاکستان کی معروف سیاسی و مذہبی جماعتوں نے مل کر اس تنظیم کی بنیاد رکھی تھی اور  اس تنظیم کو قائم ہوئے چند ماہ نہیں بلکہ کئی سال ہو چکے ہیں اور اس تنظیم میں ملک کی تمام جماعتوں کے مرکزی قائدین شامل ہیں  ،جبکہ ہر سال اس تنظیم کے پلیٹ فارم سے کشمیریوں کی حمایت میں بھر پور مظاہرے ،ریلیاں ،سیمینارز ،جلسے اور مذاکرے  بھی  منعقد ہوتے ہیں ۔

مزید : بین الاقوامی /اہم خبریں


loading...