اس کیڑےکے پر زندہ ہیں اور سانس لیتے ہیں،جدید تحقیق نے وہ بات بتا دی جو انسان کبھی سوچ بھی نہیں سکتا تھا

اس کیڑےکے پر زندہ ہیں اور سانس لیتے ہیں،جدید تحقیق نے وہ بات بتا دی جو انسان ...
اس کیڑےکے پر زندہ ہیں اور سانس لیتے ہیں،جدید تحقیق نے وہ بات بتا دی جو انسان کبھی سوچ بھی نہیں سکتا تھا

  



برلن (نیوز ڈیسک) سائنسدان آج تک یہی سمجھتے رہے کہ حشرات کے پر بے جان ہوتے ہیں لیکن ’مارفو ڈریگن فلائی‘ نامی مکڑی کے اتنہائی دلکش نیلے پروں کاجب سائنسدان رینر گلرمو فریرا نے پہلی بار الیکٹرون خوردبین سے مشاہدہ کیا تو وہ اس قدر حیران ہوئے کہ انہیں یہ معاملہ دنیا بھر کے ماہرین حشرات کے سامنے رکھنا پڑ گیا۔

سائنس نیوز کی رپور ٹ کے مطابق فریرا کا کہنا ہے کہ انہوں نے جرمنی کی کیل یونیورسٹی میں اپنے ایک ساتھی سائنسدان کو مارفو ڈریگن فلائی کے پروں کی انفرادیت کے بارے میں بتایا تو وہ بھی بے حد حیران ہوئے۔ جریدے ’بائیالوجی لیٹرز‘ میں شائع ہونے والی اپنی تحقیق میں فریرا میں بتاتے ہیں کہ اس مکڑی کے پروں میں نظام تنفس موجود ہے اور یہ ایک مکمل زندہ جسم کی طرح ہیں۔ دنیا میں اس سے پہلے کسی بھی اور قسم کے حشرات میں یہ خوبی دیکھنے میں نہیں آئی۔

سائنسدانوں کا کہنا ہے کہ ان مکڑیوں کے پروں کے انتہائی پیچیدہ قسم کے رنگ بھی دراصل اسی وجہ سے ہوتے ہیں کہ ان کے پر زندہ اجسام ہوتے ہیں اور سانس لیتے ہیں۔ درحقیقت یہ پروں کا قدرتی رنگ نہیں ہوتا بلکہ ان میں پائی جانیوالی آکسیجن سے منعکس ہوتی روشنی کا رنگ ہوتا ہے، جن کی وجہ سے یہ انتہائی دلکش نیلے نظر آتے ہیں۔

مزید : ڈیلی بائیٹس


loading...