مانگامنڈی میں مردہ مرغیوں کا تیل بنانے والی فیکٹریوں کی بھرمار ، تعفن سے بیماریاں پھیلنے لگیں

مانگامنڈی میں مردہ مرغیوں کا تیل بنانے والی فیکٹریوں کی بھرمار ، تعفن سے ...

 مانگا منڈی (نمائندہ خصوصی) مانگا منڈی میں مردہ مرغیوں سے گوشت اور تیل نکالنے کا غیر قانونی دھندہ عروج ،فیکٹریوں سے اٹھنے والے تعفن اور بدبو کی وجہ سے شہری بیماریوں میں مبتلا،اہل علاقہ کا اعلیٰ حکام سے کارروائی کا مطالبہ۔تفصیلات کے مطابق مانگا گاؤں قلعہ کسوکامیں کچھ لوگوں نے مردہ مرغیوں سے گوشت اور تیل نکالنے کی فیکٹریاں اور کارخانے لگا رکھے ہیں۔اہل علاقہ کے مطابق شام ہوتے ہی مرغیوں کی دکانوں سے آنے والاکچرا مرغیوں کے پر،آلائیش اور مردہ مرغیوں کی گاڑیاں فیکٹریوں اور کارخانوں میں آنا شروع ہوجاتی ہیں جس سے فیکٹری مالکان تیل نکال کر فروخت کرتے ہیں۔ جس کی وجہ سے علاقوں میں گندگی تعفن پھیلا رہتا ہے ۔اہل علاقہ کا مزید کہنا تھا کہ فیکٹری مالکان کوکئی بار آگاہ کیا کہ یہ غیر قانونی دھندہ بند کر دیں شہریوں کی صحت متاثر ہو رہی ہے لیکن کچھ حاصل نہ ہو سکا جس کے خلاف شہریوں نے مقامی پولیس اسٹیشن میں قانونی کاروائی کے لئے درخواست جمع کرادی ہے اور وزیر اعلیٰ پنجاب،محکمہ ماحولیات اورڈپٹی کمشنر لاہور سے مطالبہ کیا ہے کہ مردہ مرغیوں سے گوشت اور تیل نکالنے کا غیر قانونی دھندہ کرنے والی فیکٹریوں او ر کارخانوں کے خلاف فوری کارروائی کی جائے۔

مزید : میٹروپولیٹن 1