سیلاب سے نمٹنے کیلئے 210ملین کے فنڈ جاری کرنیکا فیصلہ

سیلاب سے نمٹنے کیلئے 210ملین کے فنڈ جاری کرنیکا فیصلہ

 لاہور(سٹی رپورٹر)نگران وزیر اعلیٰ پنجاب کی ہدایت پر کسی بھی متوقع سیلاب کے پیش نظر فلڈ ریلیف آپریشن کیلئے 210 ملین روپے کے فنڈز تمام ڈپٹی کمشنرز کو جاری کر دئیے جائیں گے۔ محکمہ بلدیات فوری طور پر گندے پا نی کے بہاؤ میں حائل رکاوٹوں کو دور کرے ۔ ڈی واٹرنگ سیٹس ،ڈسپوزل سٹیشنز ،جنریٹرز اور دیگر عملہ کو آپریشنل حالت میں رکھے۔ فلڈ وارننگ سنٹر نے کام شروع کر دیا ہے ۔ فلڈ وارننگ سنٹر ضلعی حکومتوں، صوبائی ڈیزاسٹر مینجمنٹ اتھارٹی اور دیگر متعلقہ، محکموں کے ساتھ سیلاب کی پیشگی اطلاع اور بچاؤ کے اقدامات کے حوالے سے ر ابطے میں رہے گا۔ صوبے کی تمام 54نہری ڈویژنوں کیلئے فلڈ فائٹنگ پلانز تیار کر کے ایس او پیزفیلڈ فارمیشن کے حوالے کر دیے گئے۔ سیلاب کے خطرے سے دوچار علاقوں میں محکمہ آبپاشی نے پاک فوج کے ساتھ مشترکہ انسپکشن کاعمل مکمل کر لیا ۔ایسے علاقوں میں سیلاب سے بچاؤ کی مشقیں بھی مکمل کر لی گئی ہیں۔یہ باتیں صوبائی وزیر آبپاشی و بلد یا ت ظفر محمود نے سول سیکر ٹر یٹ میں فلڈ انتظامات کے حوالے سے فلڈ کیبنٹ کمیٹی کے اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے کہی ۔ اس موقع پر چیف سیکر ٹری، سینئر ممبر بورڈ آف ریونیو، ڈ ی جی پی ڈی ایم اے مدثر وحید ملک متعلقہ محکموں کے سیکر ٹریز، فوج ،پولیس ، افسران بھی موجود تھے۔ اجلاس میں مون سون اور ممکنہ سیلاب کے پیش نظر کئے جانے والے حفاظتی اقدامات کا تفصیلی جائزہ لیا گیا۔ صوبائی وزیر نے بتایا کہ اضلاع کے ڈی سیز کی سربراہی میں نہروں اور دریاؤ ں کے پشتوں کی نگرانی کیلئے کمیٹیاں قائم کر دی گئی ہیں یہ کمیٹیاں سیلابی صورتحال میں کسی بھی ہنگامی صورتحال اورنہروں ، دریاؤں کے کناروں میں کسی شگاف کی صورت میں محکمہ آبپاشی کے قریبی تعاون سے اپنا کردار ادا کریں گی۔ انہوں نے کہا کہ مون سون کے دوران محکمہ آبپاشی کا فیلڈ سٹاف چوبیس گھنٹے ڈیوٹی پر موجود رہے گا، صوبائی وزیر نے کہا کہ محکمہ آبپاشی میں قائم فلڈ سیفٹی ایویلیوایشن سیل کی ٹیمیں دریاؤں اور نہروں پر مشتمل انفراسٹرکچرکی مانیٹرنگ کی روشنی میں اپنی رپورٹس متعلقہ زونوں کے چیف انجینئرز کو بھیج رہی ہیں جن کی روشنی میں محکمہ آبپاشی کے حکام سیلاب سے بچاؤ کے اقدامات یقینی بنا رہے ہیں ۔ شدید بارشوں کے باعث ہونے والے مختلف حادثات میں جاں بحق ہونے والے افراد کے لواحقین کیلئے مالی امداد بارے بھی جائزہ لیا گیا۔انہوں نے کہا کہ دریاؤں میں پانی کی صورتحال کو 24 گھنٹے مانیٹر کیا جارہا ہے اور اس حوالے سے صوبائی اور وفاقی محکمے آپس میں قریبی رابطہ رکھ کر کام کررہے ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ صوبائی، ڈویژن اور اضلاع کی سطح پر فلڈ ایمرجنسی کنٹرول رومز 24 گھنٹے فنکشنل رکھے جا ئیں۔

سیلاب ،فنڈز

مزید : میٹروپولیٹن 1